- الإعلانات -

کراچی سے مسافر نہ لاتے تو کراچی میں لوگ سڑکوں پر مر جاتے،شیخ رشید

وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہاہے کہ کراچی سے مسافر نہ لاتے تو کراچی میں لوگ سڑکوں پر مر جاتے،25 اپریل یا یکم مئی کو ریلوے آپریشن شروع کرنے کا فیصلہ کریں گے ، ریلوے آپریشن کیلئے لاک ڈاﺅن کا ختم ہونا ضروری ہے ،انگریز نے 70 سال پہلے میڈیکل کوچز بنائی ہوئی تھیں ۔ وزیر ریلوے شیخ رشید نے کہاکہ لاک ڈاوَن ایسا ہو کہ لوگ بھوک سے نہ مریں،غریب نہیں، اصل مسئلہ سفید پوش طبقے کا ہے،انہوں نے کہاکہ پاکستان میں کورونا وائرس کنٹرول میں ہے،پاکستان میں امریکہ، سپین اور بیلجیئم جیسی صورتحال نہیں،اللہ تعالیٰ نے ہی یہ وبا ختم کرنی ہے،کورونا پاکستان میں کنٹرول میں رہےگا،زیادہ تباہی نہیں پھیلائےگا۔

شیخ رشید نے کہاکہ آصف زرداری تک سب کی ضمانت ہوسکتی ہے لیکن غریب کی نہیں،عمران خان کا وعدہ ہے وہ ان کو نہیں چھوڑے گا،انہوں نے کہا کہ شہبازشریف میرادوست ہے،اسے لیپ ٹاپ استعمال کرنا بھی نہیں آتا،شہبازشریف کو ایک دو اور پیشیوں پر دم درود کے صدقے چھوڑ دیاجائےگا،

وفاقی وزیر نے کہاکہ کورونا وائرس دنیا کی سیاست بدل دے گا،مرادعلی شاہ سے اپیل ہے دفعہ144کی خلاف ورزی کرنے والوں کو رہا کریں،شیخ رشیدنے کہا کہ وعدہ ہے کہ 12 ہزار روپے ہر قلی کو ملیں گے ،ٹی ایل اے ملازمین کو مستقل کررہے ہیں۔