- الإعلانات -

ترجمان وزیراعظم ندیم افضل چن کی نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو

وزیراعظم کے ترجمان ندیم افضل چن نے کہا ہے کہ قومی حکومت کا کوئی امکان نہیں ہے، اس وقت حکومت کی تمام تر توجہ کورونا وائرس کے پھیلاﺅ کو روکنے اور ملک کے پسے ہوئے لوگوں کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دینے پر مرکوز ہے، ن لیگ نے طویل عرصے تک اقتدار کے مزے لوٹے اور اب اسے احتساب کیلئے بھی تیار ہونا چاہیے، سزا وجزا ہو گی تو جمہوریت مضبوط ہو گی۔ منگل کو نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ماضی میں کبھی کسی حکومت نے چینی بحران پر کمیشن نہیں بنایا، تحقیقاتی کمیشن بنانے پر موجودہ حکومت کوکریڈٹ دینا چاہیے ، آٹا چینی بحران کا معاملہ منطقی انجام تک پہنچے گا۔ ندیم افضل چن نے کہا کہ چینی اور آٹے بحران میں بھی ن لیگ کا زیادہ حصہ ہے، سب سے زیادہ سبسڈی ن لیگ نے اپنے دور حکومت کے دوران دی اور لی ہے، ن لیگ کے دور حکومت میں کسانوں کو 180 روپے ریٹ بتا کر 120 ریٹ دیا گیا۔ انہوں نے کہا کہ پاور سیکٹر اسکینڈل کی رپورٹ بھی آ گئی ہے اور اب اس کا فرانزک آڈٹ ہو گا اور ذمہ داران کے خلاف سخت ایکشن لیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت عوام کو سہولت دینے کیلئے بجلی سستی کرنے کے حوالے سے پالیسی بنا رہی ہے۔ ترجمان وزیراعظم نے کہا کہ حکومت معیشت کی بحالی کیلئے صنعتی شعبوں، کسانوںاور تاجروں کو سہولیات دینے کے حوالے سے اقدامات اٹھا رہی ہے، ایس او پیز کے تحت کاروبار کھلنے ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کورونا وائرس سے متاثر ہونے والے لوگوں کو احساس کیش ایمرجنسی پروگرام کے ذریعے مستحق خاندانوں کو فی خاندان 12 ہزار روپے تقسیم کر رہی ہے اور اس پروگرام کو مزید بڑھایا جائے گا۔ ندیم افضل چن نے کہا کہ حکومتی فیصلے میں کوئی کنفیوژن نہیں ہے، علمائے کرام کی مشاورت سے مساجد کو کھولنے کیلئے 20 نکاتی گائیڈ لائن دی گئی ہیں اور مساجد کمیٹیاں ایس او پیز پر عمل درآمد کرانے کی پابند ہوں گی۔ انہوں نے کہا کہ ماضی میں کبھی بھی وفاق اور صوبوں کے درمیان رابطہ نہیں ہوا اس وقت وفاق اور صوبوں کے درمیان زبردست کوآرڈینیشن ہے، کئی لوگوں کی خواہش تھی کہ وفاق اور صوبوں، وفاق اور مذہبی طبقے کے درمیان محاذ آرائی ہو لیکن ایسے لوگوں کی خواہشات پوری نہیں ہوں گی۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ اور پیپلزپارٹی نے اپنے دور حکومتوں کے دوران کوئی جدید لیب نہیں بنائیں تاہم اس وقت کورونا ٹیسٹ کیلئے ملک بھر میں 50 سے زائد لیبارٹریاں کام کر رہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت غریب لوگوں کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دینے کیلئے ہر ممکن اقدامات اٹھا رہی ہے، عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی سے مہنگائی میں کمی ہو گی