- الإعلانات -

لوگ گھروں میں نماز ادا کریں اور کوویڈ۔19 سے متعلق احتیاطی تدابیر اپنائیں

صدر مملکت ڈاکٹرعارف علوی نے کہا ہے کہ لوگ گھروں میں نماز ادا کریں اور کوویڈ۔19 سے متعلق احتیاطی تدابیر اپنائیں، اگر صورتحال مزید خراب ہوتی ہے یا علماء کے ساتھ معاہدے کے تحت ہدایات پر عمل نہیں ہوتا ہے تو نماز اور تراویح کے بارے فیصلے پر حکومت نظرثانی کرے گی۔ جمعرات کو اپنے ایک بیان میں صدر مملکت نے کہا کہ علماء کرام کے ساتھ معاہدے کے پہلے 17 نکات نماز اور تراویح کے دوران حفاظتی اقدامات کو اجاگر کرتے ہیں، ان احتیاطی تدابیر پر پوری دنیا میں اتفاق رائے ہے۔ انہوں نے کہا کہ ان احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد امام مسجد، مسجد کمیٹیوں، ضلعی انتظامیہ اور صوبائی حکومت کی مشترکہ ذمہ داری ہے۔ صدر مملکت نے کہا کہ مساجد اور امام بارگاہ انتظامیہ کو نماز اور تراویح کی مشروط اجازت دی گئی ہے بشرطیکہ ان احکامات پر سختی سے عملدرآمد کیا جائے، اگر صورتحال مزید خراب ہوتی ہے یا ان ہدایات پر عمل نہیں ہوتا ہے تو نماز اور تراویح کے بارے میں فیصلے پر حکومت نظرثانی کرے گی۔ صدر ملکت نے کہا کہ معاہدہ صوبائی حکومتوں کو مساجد اور امام بارگاہوں میں اپنی لاک ڈاؤن شرائط پر عملدرآمد کرنے کا اختیار دیتا ہے۔ اس معاہدے میں علماء کرام نے حکومت پر مکمل اعتماد کا اظہار کیا ہے