- الإعلانات -

”احساس ٹیلی تھون “میں مولانا طارق جمیل نے دعا کے دوران میڈ یا کو تنقید کا نشانہ بنا دیا ،حامد میر نے مولانا طارق جمیل سے بڑا مطالبہ کردیا

معروف مذہبی سکالر مولانا طارق جمیل نے ’احساس ٹیلی تھون ‘کے دوران دعا کراتے ہوئے میڈ یا پر تنقید کردی ،ان کا کہنا تھا کہ جتنا جھوٹ میڈیا پر بولا جاتا ہے اس کی وجہ سے بڑے مسائل پیدا ہوئے ہیں ،ایک ٹی وی چینل کے مالک نے انہیں کہا کہ اگر میڈ یا پر جھوٹ نہ بولا جائے تو میڈ یا نہیں چل سکتا ۔مولانا طارق جمیل کے اس بیان پر رد عمل دیتے ہوئے حامد میر نے کہا کہ مولانا طارق جمیل نے دعا کے دوران میڈ یا کے بارے میں کچھ ایسی باتیں کہیں جس سے غلط فہمی پیدا ہو سکتی ہے ،دعا کے بعد پروگرام ختم ہو گیا اس لیے میڈ یا کے پاس دفاع کا حق نہیں تھا ۔حامد میر نے کہا کہ جو بھی میڈ یا پر بیٹھ کر جھوٹ بولتا ہے اس پر اللہ کی لعنت ،مولانا طارق جمیل کو ٹی وی چینل مالک کا نام بتانا چاہیے کیونکہ مذہبی لیڈر ہونے کی حیثیت سے یہ ان کا فرض ہے ،مولانا طارق جمیل سے درخواست ہے کہ آئندہ جب ایسی بات کریں تو نا م لیں ،سب کے بارے میں غلط فہمی پھیلانا ٹھیک نہیں ہے ۔حامد میر نے بتا یا کہ مولانا طارق جمیل جو باتیں آج کرر ہے ہیں ،یہ ہی باتیں نوے کی دہائی میں وزیراعظم نواز شریف کے کابینہ اجلاس میں کیا کرتے تھے ،مولانا طارق جمیل نواز شریف کے بارے میں بھی وہ ہی باتیں کرتے تھے جو آج عمران خان کے بارے میں کر رہے ہیں ۔