- الإعلانات -

شبلی فراز اور عاصم سلیم باجوہ کا انتخاب ، وزیر اعظم کا بہترین فیصلہ ہے .سردار خان نیازی

وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز انتہائی زیرک شخصیت کے حامل ، عاصم سلیم باجوہ نے کبھی بھی ذاتی مفاد کو برتر نہیں رکھا
اسلام آباد (تجزیہ: ایس کے نیازی)20اپریل کو میں نے حلقہ احباب میں وفاقی وزیر شفقت محمود کی زیر صدارت ہونے والے اجلاس کی رو داد لکھی ، انکشاف ہوا اور حیرتوں کا باب گویا کھل گیا، یہ بات میرے لئے انتہائی انکشاف انگیز تھی کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے ابھی تک پرنٹ میڈیا کو 2ارب 65کروڑ روپے کے اشتہارات جاری کیے، تمام صورتحال اس وقت منکشف ہوئی جب پرنٹ میڈیا کے بقایا جات کے حوالے سے بات کھلی ، میں تو سن کر انگشت بدانداں ہو گیا، اب جہاں تک 2ارب 65کروڑ کی بات ہے تو یہ اتنی خطیر رقم ایسے تو نہیں خرچ ہو گئی، اس کا کسی نہ کسی کے پاس جواب تو ہو گا، یہاں پر اس بات کا بھی تذکرہ آیا کہ فردوس عاشق اعوان کی موجودگی میں اجلاس کی سربراہی کوئی دوسرا وزیر کر رہا تھا تو یہ بھی ایک تبدیلی کا سگنل تھا، اس حوالے سے میں نے قبل از وقت ہی نشاندہی کر دی تھی، جب یہ تمام اونچ نیچ وزیر اعظم کے علم میں آئی تو انہوں نے فوراً ایکشن لیا ، یہاں تو مسئلہ اس طرح چل رہا تھا مصداق اس کے کہ ” اندھا بانٹے ریوڑیاں اپنوں اپنوں کو دے ” جو کہ انتہائی غلط با ت ہے، یہ اربوں روپے کدھر چلے گئے ، اس کا دودھ کا دودھ پانی کا پانی ہونا چاہیے ، جو لوگ حکومت کی کشتی میں بیٹھ کر اسی میں سوراخ کرنے میں مصروف ہیں ان کے گرد گھیرا تنگ ہونا وقت کی اہم ضرورت ہے ، پھر 25اپریل کی اشاعت میں میں وزیر اعظم کے نام کھلا خط لکھا ، جس میں مزید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے بتایا کہ وزارت اطلاعات اپنوں کو نوازنے کا فارمولا چلاتی ہے ، اپنی مرضی کے ریٹ دیے جاتے ہیں جن میں اقرباء پروری واضح طور پر نظر آتی ہے ، اے اور بی کٹیگری بنادی جاتی ہے جبکہ ایک پاکستان ہے ، یہ تمام ایسی بنیادی چیزیں تھیں جو کہ فردوس عاشق کی تبدیلی کا باعث بنیں اور میں گاہے بگاہے جناب وزیر اعظم کو اس حوالے سے آگاہ کرتا رہا، اب وزیر اعظم پاکستان بلکل درست سمت میں جا رہے ہیں، اس وقت انہوں نے فخر امام کے حوالے سے جو فیصلہ کیا وہ بھی انتہائی احسن ہے جہاں تک شبلی فراز کو وزیر اطلاعات بنانے کا تعلق ہے تو یہ انتہائی قابل قدر فیصلہ ہے ، شبلی فراز ایک اچھے خاندان سے تعلق رکھتے ہیں، پی ٹی آئی میں ان کا ایک مقام ہے ، دو سال کے بعد وزیر اعظم کو خیال آیا کہ اچھے لوگ ہی ملک کیلئے فائدہ مند ہو سکتے ہیں، اور جب ایسے تجربہ کار لوگ ذمہ داریاں سنبھالیں گے تو یقینی طور پر قائد اعظم کے ویژن کے مطابق کامیابی حاصل کرنے میں آسانی ہو گی، وزارت اطلاعات کی ذمہ داری یہ ہوتی ہے کہ وہ حکومتی منصوبہ جات اس کی پالیسیاں اور دیگر اقدامات عوام کے سامنے صحیح انداز میں پیش کرے ، مشیر اطلاعات جنرل (ر)عاصم سلیم باجوہ کا چنائو بھی بہت بڑی پیش رفت ہے ، عاصم سلیم باجوہ نے کبھی بھی اپنے ذاتی مفادات کو مقدم نہیں رکھا، ہمیشہ پاکستان اور اپنے ادارے کو برتر رکھنے میں ان کا کوئی ثانی نہیں، جب وہ ڈی جی آئی ایس پی آر تھے اس وقت بھی وہ پاک فوج کو بلندیوں تک لے گئے اور بحیثیت ترجمان پاک فوج ادارے کا نقطہ نظر بہترین انداز میںپیش کیا، وہ دبنگ شخصیت کے مالک ہیں، دشمن ان کے سحر سے ہی خوفزدہ ہو جاتا ہے ، وہ بروقت اور مدلل گفتگو کرتے ہیں، یقینی طور پر یہ تبدیلی بھی حکومت کیلئے نہایت مثبت ثابت ہو گی۔