- الإعلانات -

وزیراعظم نے ملک کے نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرنے کے حوالے سے حکومتی کوششوں کے سلسلے میں ”گرین سٹیمولیس پیکیج“ کی منظوری دیدی

وزیراعظم عمران خان نے ملک میں سرسبز علاقہ بڑھانے اور کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورتحال کے دوران بالخصوص ملک کے نوجوانوں کو روزگار کے مواقع فراہم کرنے کے حوالے سے حکومتی کوششوں کے سلسلے میں ”گرین سٹیمولیس پیکج“ کی منظوری دیدی ہے۔ منگل کو وزیراعظم میڈیا آفس سے جاری بیان کے مطابق یہ پیکج 10 بلین ٹری سونامی منصوبے کا حصہ ہے اور اس کا مقصد پودے لگانے کا فروغ، نرسریاں، جنگلات اور شہد، پھلوں اور زیتون کی پیداوار کو فروغ دینا ہے۔ پیکج کے تحت ایک سرسبز نگہبان منصوبہ شروع کیا جائے گا تاکہ ابتدائی طور پر 65 ہزار نوجوانوں اور دیہاڑی دار افراد کو روزگار کے مواقع فراہم کر کے انہیں شجرکاری مہم کا حصہ بنایا جائے۔ اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ ملک میں سرسبز علاقے کو بڑھانا اور موسمیاتی مسائل کا حل موجودہ حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے کہا کہ گرین سٹیمولیس پیکج اور بالخصوص سرسبز نگہبان منصوبے کے ذریعے نوجوانوں کو روزگار کے مواقع ملیں گے اور اس سے سرسبز پاکستان کے مقاصد کے حصول میں مدد ملے گی۔ وزیراعظم نے کہا کہ اس پیکج کے ذریعے دیہاڑی دار افراد کورونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورتحال کے دوران عزت و وقار کے ساتھ اپنی روزی کما سکیں گے۔ وزیراعظم نے ہدایت کی کہ صوبائی حکومتوں اور بین الاقوامی اداروں سمیت تمام متعلقہ فریقین کو اس پروگرام کا دائرہ بڑھانے اور روزگار کے اضافی مواقع پیدا کرنے کے لئے ان کی خدمات حاصل کی جائیں۔ وزیراعظم نے وزارت موسمیاتی تبدیلی کو ہدایت کی کہ ڈیٹ فار نیچر سواپ پروگرام کے تحت بین الاقوامی برادری سے رابطے کے لئے ایسا عملی منصوبہ تیار کیا جائے تاکہ ملک کے قرضے کو بڑے پیمانے پر شجرکاری اور ماحولیاتی تحفظ کی سرگرمیوں کے لئے گرانٹ میں تبدیل کیا جا سکے۔ وزیراعظم نے کہا کہ پروگرام کی کامیابی کے لئے شفافیت اور کمیونٹی کی شرکت کو یقینی بنایا جائے کیونکہ یہ پروگرام ہماری آنے والی نسلوں کے بہتر مستقبل کے لئے بہت اہمیت رکھتا ہے۔ وزیراعظم نے اس امر پر زور دیا کہ سرسبز پاکستان کے فروغ کے لئے ملک بھر میں نیچرل پارکس قائم کرنے کے لئے صوبوں کے تعاون سے علاقوں کی نشاندہی کی جانی چاہیے