- الإعلانات -

چیف ایڈیٹرروزنامہ پاکستان ایس کے نیازی نے2010 میں ہی 18ویں ترمیم کوسپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا تھا

اسلام آباد ( عزیر احمد خان ) اٹھارہویں ترمیم کے سامنے وفاق بے بس،18ویں ترمیم، وزیراعظم کے اختیارات صرف 25کلومیٹرتک محدود،وفاق کی جانب سے18ویں ترمیم میں تبدیلی لانے کی لئے جتن،چیف ایڈیٹرروزنامہ پاکستان ایس کے نیازی کاموقف10سال بعددرست ثابت،ایس کے نیازی نے شروع سے ہی18ویں ترمیم کوملکی مفادکے منافی قراردیاتھا،ایس کے نیازی نے اپریل2010کوہی سپریم کورٹ کادروازہ کھٹکھٹایاتھا،2010 میں سیاسی جماعتیں قومی کی بجائے ذاتی مفادپرسمجھوتہ کرچکی تھیں ،ایس کے نیازی تن تنہاہی قومی مفادکادفاع کررہے تھے ،مشکل کی گھڑی،وفاق بے بس،ایس کے نیازی کاموقف10سال بعددرست ثابت،چیف ایڈیٹرروزنامہ پاکستان نے2010کوہی18ویں ترمیم کوسپریم کورٹ میں چیلنج کیاتھا،ایس کے نیازی نے سپریم کورٹ میں 18ویں ترمیم کےخلاف درخواست دائرکی تھی،چیف ایڈیٹرروزنامہ پاکستان سپریم کورٹ میں ان پرسن پیش ہوئے تھے،18ویں ترمیم نے بنیادی انسانی حقوق کونقصان پہنچایا،درخواست کامتن،18ویں ترمیم عوامی مفادکےخلاف ہے،18ویں ترمیم کے بعدوفاق کمزورہواہے،قومی مفاد میں 18ویں ترمیم کوکالعدم قراردیاجائے،کی سپریم کورٹ پاکستان میں دائردرخواست کامتنایس کے نیازی نے عوامی ،ملکی مفاد میں متعددبارعدالتوں کادروازہ کھٹکھٹاتے رہتے ہیں ،ایس کے نیازی متعددبارعوام کی خاطرعدالتتے رہتے ہیں ،اسی لیے جانتاہوں ،سابق چیف جسٹس افتخارمحمدچوہدری کا ایس کے نیازی کی سماجی خدمات کوخراج تحسین پیش کیا ۔