- الإعلانات -

بھارت کشمیر سے توجہ ہٹانے کیلئے پاکستان کیخلاف کارروائی کے عزائم رکھتا ہے، وزیراعظم

اسلام آباد: وزیر اعظم نے مقبوضہ کشمیر پر بھارتی قبضے کو طول دینے کے لیے مودی سرکار کے عزائم بے نقاب کردیے ہیں۔

اپنی ٹوئٹ میں وزیر اعظم نے کہا کہ مقبوضہ جموں و کشمیر کے حوالے سے مودی کاآر ایس ایس سے متاثرہ نظریہ نہایت واضح ہے۔ اولاً مقبوضہ خطے پر غیر قانونی قبضے کے ذریعے اہلِ کشمیر کو حق خودارادیت سے محروم کیا جائے۔ثانیاً ایک سہ-شاخہ حکمت عملی کے ذریعے ان سے کمتر انسانوں کا سا برتاؤ کیا جائے۔

ان کا کہنا تھا کہ بچوں اور خواتین کے خلاف چھرے والی بندوقوں سمیت غیرانسانی اسلحےکےبل پر پورےجبر سےانہیں کچلاجائے ۔ اس کے بعد ادویہ و خوراک سمیت بنیادی اشیائے ضروریہ سے محروم کرنے کیلئےکرفیو نافذکیاجائے ۔
مقبوضہ جموں و کشمیر کے حوالے سے مودی کا RSS سے متاثرہ نظریہ نہایت واضح ہے: اولاً مقبوضہ خطے پر غیر قانونی قبضے کے ذریعے اہلِ کشمیر کو حق خودارادیت سے محروم کیا جائے۔ثانیاً ایک سہ-شاخہ حکمت عملی کے ذریعے ان سے کمتر انسانوں کا سا برتاؤ کیا جائے

— Imran Khan (@ImranKhanPTI) May 17, 2020

وزیر اعظم کا کہنا تھ اکہ مودی سرکار چاہتی ہے کہ اہل کشمیر خصوصاً نوجوانوں کی بڑےپیمانےپرگرفتاریوں، ذرائع مواصلات کےانقطاع کےذریعے کشمیرکودنیاسےکاٹ ڈالاجائے۔

انہوں نے کشمیر پرقبضے کو طول دینے کے لیے بھارتی عزائم بیان کرتے ہوئے کہا کہ مودی سرکار چاہتی ہے کہ خودارادیت کیلئےاہل کشمیر کےجدوجہد کےحق کو(سلامتی کونسل کی قراردادیں جس کی ضامن ہیں) پاکستان کی ایماء پرکی جانے والی دہشت گردی کا رنگ دے کر مقبوضہ جموں و کشمیر میں بھارت کی ریاستی دہشتگردی سےدنیا کی توجہ ہٹاتے ہوئے پاکستان کیخلاف ایک جعلی کارروائی کے امکانات پیدا کئے جائیں۔