- الإعلانات -

سورن سنگھ قتل کیس  دو ملزمان نے اقبال جرم کرلیا4 کا صحت جرم سے انکار , اقبال جرم کرنے والے دونوں ملزمان جوڈیشل ریمانڈ پر دوبارہ جیل منتقل

سورن سنگھ قتل کیس میں اہم پیش رفت دو ملزمان نے اقبال جرم کرلیا 4 کا صحت جرم سے انکار  گرفتار 6 ملزمان کو دس روزہ جسمانی ریمانڈ کے بعد گزشتہ روز عدالت میں پیش کیا گیا تھا  اقبال جرم کرنے والے دونوں ملزمان جوڈیشل ریمانڈ پر دوبارہ جیل منتقل ۔ پولیس ذرائع کے مطابق تحریک انصاف خیبرپختونخوا اسمبلی کے رکن ڈاکٹر سورن سنگھ قتل کیس میں اہم پیش رفت ہوئی ہے اور گرفتار دو ملزمان نے اقبال جرم کرلیا ہے ۔سورن سنگھ کو چند روز پہلے فائرنگ کرکے قتل کردیاگیا تھا جس کے بعد ّپولیس نے مقدمہ درج کرکے تفتیش شروع کردی تھی ۔ سورن سنگھ کے قتل میں ملوث عالم خان اور اس کے ساتھی نے اعتراف جرم کرلیا جبکہ تحریک انصاف کے گرفتار رہنما بلدیوکمار سمیت چار ملزمان نے جرم ماننے سے انکار کردیا ۔ قتل کیس میں مبینہ ملوث 6 ملزمان پولیس کی دس روزہ ریمانڈ کے بعد سخت سیکورٹی میں علاقہ مجسٹریٹ سول جج فرسٹ کی عدالت میں پیش کیا گیا جس میں بہروز خان اور محمد عالم نے اپنے جرم کا اعتراف کرلیا ، جبکہ باقی چار ملزمان نے صحت جرم قبول کرنے سے انکار کردیا ۔ اس موقع پر ڈی پی او بونیر سید خالد ہمدانی ، ایس پی انوسٹی گیشن ڈسٹرکٹ پبلک پراسیکیوٹرز بھی موجود تھے ۔ اس موقع پر ڈی پی او بونیر نے بتایا کہ بہروز خان اور محمد عالم کے اعتراف جرم کے بعد ہماری کیس کی کڑیاں درست سمت میں جائیں گی ۔ ملزموں کو جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا ۔ یاد رہے کہ سورن سنگھ کو چند روز قبل مسلح افراد نے فائرنگ کرکے قتل کردیا تھا سورن سنگھ وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا پرویز خٹک کے مشیر تھے۔