- الإعلانات -

افغانستان کو سوچنا چاہئے وہ بھارت کے ہاتھوں استعمال نہ ہو ، امریکہ کبھی نہیں چاہے گا افغانستان میںمکمل امن ہو۔۔۔۔کیچ لائن

افغانستان کے مسائل کا حل صرف مذاکرات میں ہے، مشکلات ضرور درپیش ہیں،ایس کے نیازی۔۔۔کورل
پاکستان کی خواہش ہے کہ افغانستان میں امن ہو،افغانی سوچ لیں تو حالات بہتر ہو سکتے ہیں،افغانیوں میں کسی نہ کسی معاملے پر اختلافات ہو جاتے ہیں
نوے کی دہائی کے دوران ہم افغانستان گئے تھے ، حکمت یار اور دیگر را ہنمائوںسے ملاقاتیں ہوئیں، اعجاز الحق بھی پہنچ گئے تھے ، تب بھی ہم نے مذاکرات پر ہی زور دیا تھا
تحریک انصاف کی حکومت آئی تو عوام نے کہا کہ لاء اینڈ آرڈر میں بہتری آئیگی ، میں ہیومن رائٹس کے کیسز پر کام کرتا رہا ،سنگ پرسنز کا میرا ہی کیس تھا جس پر ازخود نو ٹس ہوا
مسنگ پر سنز کے کیس میں میں بھی میں نے بہت مشکلات برداشت کیں،میرے چار آ دمیوں کو اٹھا لیا گیا،پنجاب ، سندھ میں پولیس کلچر کا بیڑا غرق ہے،کے پی کے کی پولیس پہلے سے اچھی تھی
کسی واقعہ کو سلجھا نے کا پنجاب پولیس میں کلچر ہی نہیں بنا ، عمران خان کی نیت پر کوئی شک نہیں وہ محنتی اور ایماندار شخصیت کے حامل ہیں، روز نیوز کے پرو گرام سچی بات میں گفتگو
اسلام آباد (روزنیوزرپورٹ)پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز کے چیف ایڈیٹر اور روزنیوز کے چیئرمین ایس کے نیازی نے پروگرام ” سچی بات ” میں کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت آئی تو عوام نے کہا کہ لاء اینڈ آرڈر میں بہتری آئیگی ، میں ہیومن رائٹس کے کیسز پر کام کرتا رہا ،0 200کی بات ہے کچھ مسنگ پرسن کا کیس بھی میری خبر پر بنا ، اس میں بھی میں نے بہت مشکلات برداشت کیں، آپ نے بھی بہت کام کیا، لیکن کوئی نتائج نہیں نکلے ، مسنگ پرسنز کے حوالے سے میری ہی خبر پر از خود نوٹس ہوا اور مسائل کا سامنا کرنا پڑا، میرے چار آ دمیوں کو اٹھا لیا گیا،شعیب سڈل جب آپ ڈی آئی جی راولپنڈی تھے تو میں آپ کے آفس گیا تو پتہ چلا آپ خود پولیس مقابلے میں حصہ لے رہے تھے ، پنجاب ، سندھ میں پولیس کلچر کا بیڑا غرق ہے ، کے پی کے کی پولیس پہلے سے اچھی تھی، پنجاب کی پولیس میں یہ کلچر نہیں بنا کہ کسی واقعہ کو سلجھا یا نہ گیا، عمران خان کی نیت پر کوئی شک نہیں ، عمران خان نیک اور محنتی ہیں، 1990میں افغانستان گئے تھے ، حکمت یار سے ملاقات ہوئی ، اعجاز الحق بھی پہنچ گئے تھے ، ہماری یہ ہی درخواست تھی کہ مسائل کا حل مذاکرات میں ہی ہے ،افغانستان کو سوچنا چاہئے کہ وہ بھارت کے ہاتھوں استعمال نہ ہوں ، امریکہ کبھی نہیں چاہے گا کہ افغانستان میںمکمل امن ہو ، افغانی سوچ لیں تو حالات بہتر ہو سکتے ہیں، افغانیوں میں کسی نہ کسی معاملے پر اختلافات ہو جاتے ہیں، افغانستان کے مسائل کا حل صرف مذاکرات میں ہے لیکن مشکلات ضرور درپیش ہیں، پاکستان کی خواہش ہے کہ افغانستان میں امن ہو ۔