- الإعلانات -

سخت دھوپ میں کام کرنے سے گریز کیا جائے طبی ،ماہرین

اسلام آباد ۔ گرمی کی شدت کے ساتھ مختلف امراض میں بھی اضافہ ہو رہا ہے بالخصوص پیٹ کی بیماریوں میں اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے، طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ موسم کی تبدیلی انسانی صحت پر اثرانداز ہوتی ہے اور معمولات کی موسمی تبدیلی کے ساتھ نہ ڈھالنے سے مختلف طبی مسائل پیدا ہو جاتے ہیں باہر کام کرنے والے مزدور پیشہ افراد جو دن بھر سخت محنت کرتے ہیں گرمی کی شدت سے متاثر ہوتے ہیں۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ سخت دھوپ میں کام کرنے سے گریز کیا جائے اور کوشش کی جائے کہ صبح اور شام کے اوقات میں مزدور افراد اپنے لئے کام کو ترجیح دیں اور ضرورت کے پیش نظر ہلکا پھلکا لباس اور سر کو ڈھانپ کر باہر نکالا جائے اور ٹھنڈے مشروبات کا زیادہ استعمال کیا جائے۔ گرمی کے باعث دیگر امراض دل، گردے اور جگر کے امراض بھی پھیل رہے ہیں۔ احتیاطی تدابیر ہی اس کا واحد حل ہے صاف پانی جو ایک بنیادی ضرورت ہے کا زیادہ سے زیادہ استعمال جسم کو مختلف بیماریوں سے محفوظ رکھنے میں معاون ہے جبکہ تازہ موسمی پھل تربوز، آم، کیلا، اسٹرابری، صحت کے لئے مفید ہیں کا کثرت سے استعمال کرنا چاہیے اور ان کے جوسز بھی پینے چاہئیں۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ تازہ پھل بچوں اور خواتین کے لئے بہت مفید ہیں جو توانائی بحال کرنے میں معاون ثابت ہوتے ہیں، طبی ماہرین نے مزید کہا کہ گرمی کے باعث کسی بیماری کی صورت میں فوری طور پر معالج سے رجوع کیا جائے اور اپنے بہتر علاج کو یقینی بناتے ہوئے معمول کی زندگی بسر کی جائے۔