- الإعلانات -

بلوچستان سے کراچی 1 ارب 6 کروڑ کی ہیروئن اسمگلنگ کی کوشش ناکام

 کراچی:پاکستان کسٹمز گوادر کلکٹریٹ نےایک کامیاب کاروائی کرتے ہوئےڈیزل کی آڑ میں ہیروئین کی ایک بھاری مقدار کی اسمگلنگ کی کوشش کوناکام بنادیا۔

کسٹم حکام نے بتایا کہ1 ارب 6کروڑ روپے مالیت کی ہیروئین اندرون ملک اسمگل کرنے کی کوشش کی جارہی تھی۔ حکام کے مطابق 176 کلوگرام ہیروئن پاوڈر جو کہ ایکسپورٹ پیکنگ میں تھی کو آئل ٹینکر کے خفیہ خانے میں چھپایا گیا تھا۔

ہیروئن بلوچستان سے کراچی لائی جارہی تھی جسکی حکام کو اپنے خفیہ نیٹ ورک سے اطلاع موصول ہوگئی تھی۔ خفیہ اطلاع پر کسٹم حکام نے اپنی پیٹرولنگ ٹیم کو متحرک کرکے اندرون ملک جانے والے غیرمعروف راستوں پر بسوں اور مال بردار گاڑیوں کی نگرانی سخت کرنے کے لیے اضافی نفری بھی تعینات کی۔

جمعرات اور جمعہ کے درمیانی شب کسٹم پیٹرولنگ اسکواڈ نے کراچی جانب جانے والے ایک مشکوک آئل ٹینکر کو رکنے کا اشارہ دیا لیکن آئل ٹینکر کے ڈرائیور نے رکنے کے بجائے اپنی رفتار تیزی کردی جس کسٹم کی پیٹرولنگ اسکواڈ اسکا تعاقب کیا اور وندر کے مقام پر جب مشکوک آئل ٹینکر کو روکا گیا تو اسمگلروں کی جانب سے فائرنگ شروع ہوئی اور وہ رات کی تاریکی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے جسکے بعد کسٹمز حکام نے آئل ٹینکر کی تلاشی لی تو ایک خانے میں ڈیزل اور دوسرے خانے میں ہیروئن برآمد ہوئی۔

حکام نےملزمان کے خلاف کسٹمز نارکوٹکس ایکٹ کے تحت مقدمہ درج کرکے آئل ٹینکر نمبر ٹی ایم اے353 اور ہیروئن ضبط کرلیاہے۔