- الإعلانات -

جنسی زیادتی کے بڑھتے واقعات: سندھ پولیس کا اینٹی ہراسمنٹ یونٹ بنانے کا اعلان

کراچی: ملک بھر میں خواتین اور بچوں سے زیادتی اور تشدد کے بڑھتے واقعات کے پیش نظر سندھ پولیس میں اینٹی ہراسمنٹ یونٹ بنانے کا اعلان کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ کے ایڈیشنل چیف سیکریٹری ہوم ڈاکٹر عثمان چاچڑ کی زیر صدارت اجلاس منعقد ہوا، اجلاس میں ایڈیشنل آئی جی حیدر آباد ڈاکٹر جمیل، ڈی آئی جی آپریشن مقصود میمن اور سندھ پولیس کی خواتین افسران نے شرکت کی۔

اجلاس میں خواتین اور بچوں سے زیادتی اور تشدد کے بڑھتے واقعات زیر بحث آئے۔

اجلاس میں ڈی آئی جی مقصود میمن نے اینٹی ہراسمنٹ یونٹ بنانے کا اعلان کیا، مقصود میمن کا کہنا تھا کہ اے ایچ یو کا دفتر کورنگی روڈ پر پولیس سہولت مرکز میں بنایا جائے گا، زیادتی اور تشدد کے بڑھتے ہوئے واقعات کا سدباب کیا جائے گا۔

اجلاس میں متاثرہ خواتین اور بچوں کو آسان قانونی دسترس فراہم کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا۔ مقصود میمن کا کہنا تھا کہ ایس ایس یو اور 15 مددگار یونٹ کو مدد فراہم کریں گے۔

زیادتی کے واقعات کے سدباب کے لیے مہم چلانے کا فیصلہ کرتے ہوئے ایڈیشنل آئی جی حیدر آباد ڈاکٹر جمیل نے کہا کہ سوشل میڈیا مہم سے پولیس اور عوام میں ہم آہنگی کو فروغ ملے گا۔

انہوں نے کہا کہ خواتین اور بچوں سے زیادتی کے واقعات کی روک تھام میں مدد ملے گی۔