- الإعلانات -

ٹیکس پریکٹس کرنے والے افسران کیخلاف کیا ہونے جا رہا ہے؟ چیف کمشنر ایف بی آر نے دبنگ اعلان کر دیا

ْلاہور(نیوز ڈیسک ) ملکی ترقی و خوشحالی کے لیے ٹیکس اہداف پورے کرنا اولین ترجیح ہے ،ٹیکس دہندگان اور ٹیکس بار ممبران کے مسائل حل کئے جائینگے،ٹیکس پریکٹس کرنے والے افسران کیخلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ ان خیالات کااظہار ایف بی آر کے چیف کمشنر ایل ٹی یو لاہور قیصر اقبال نے ملاقات کیلئے آنے والے لاہور ٹیکس بار کے وفد سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔

لاہور ٹیکس بار کے صدر علی احسن راناکی قیادت میں سابق صدور لاہور ٹیکس بار ذوالفقار علی خان، عائشہ افتخار قاضی ایگزیکٹو کمیٹی کے ممبران شامل تھے۔اس موقع پر چیف کمشنر آر ٹی او ون آمنہ حسن بھی موجود تھیں۔ایف بی آر کے افسران نے ٹیکس بار کے وفد کو مسائل کے حل کی یقین دہانی کراتے ہوئے کہا کہ ملکی ترقی و خوشحالی کے لیے ٹیکس اہداف پورے کرنا اولین ترجیحات ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ایف بی آر کے افسران جو دوران ملازمت ٹیکس پریکٹس جاری رکھے ہوئے ہیں ان کے خلاف قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے گی ۔ انہوں نے وفد کو یقین دہانی کرائی کہ ٹیکسہائوس میں ڈسپنسری اور بنک کائونٹر کا قیام فوری عمل میں لایا جائے گا۔ ٹیکس بارز سے مل کر مسائل حل کرنا اولین ترجیحات ہیں تاکہ انصاف کی فراہمی کو یقینی بنا کر ٹیکس دہندگان کے اعتماد کو بحال اور سفر کو کم کیا جائے گا۔ علی احسن رانا نے کہا کہ جب ٹیکس دہندگان کو چائے کی پیالی پر بلا کر ٹیکس وصولی ممکن ہو سکتی ہے تو پھر خوف کی فضاکیوں پیدا کی جاتی ہے ،
بزنس مین اور تاجر برادری کی مشکلات کو کم کیا جائے، آڈٹ، ریفنڈز،ایگزمپشن سرٹیفکیٹس، رجسٹریشن معاملات حل کر کے ٹیکس اہداف پورے کئے جاسکتے ہیں۔