- الإعلانات -

وزیراعظم عمران خان کی پشاور کے مدرسے میں دھماکے کی شدید مذمت

اسلام آباد : وزیراعظم عمران خان نے پشاور مدرسے میں دھماکےکی شدید مذمت کرتے قیمتی جانوں کے ضیاع پر اظہار افسوس کیا اور زخمی افراد کو تمام طبی سہولتیں فراہم کرنے کی ہدایت کردی۔ وزیراعظم عمران خان نے پشاور دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہوئے دھماکےسے قیمتی جانوں کے ضیاع پر اظہار افسوس کیا۔وزیر اعظم نے افسوسناک واقعے پرزخمی ہونیوالوں کی جلد صحتیابی کیلئےدعا کرتے ہوئے زخمی افراد کو تمام طبی سہولتیں فراہم کرنے کی ہدایت کردی۔

دوسری جانب وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر پشاورمدرسےمیں دھماکےکی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا تعلیم حاصل کرنےوالےطلباپرحملہ کرنےوالوں کاانسانیت سےتعلق نہیں، ملک کوعدم استحکام سے دو چار کرنے والوں کے عزائم خاک میں ملائیں گے ، شہدا کے لواحقین سے تعزیت اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کی دعا کرتے ہیں۔وزیراعلیٰ پنجاب نے پشاور دیر کالونی میں مدرسے میں دھماکے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہماری ہمدردیاں جاں بحق افراد کےلواحقین اور زخمی افراد کے ساتھ ہیں ، سوگوار خاندانوں کے غم میں برابر کے شریک ہیں۔

وزیرصحت پنجاب یاسمین راشد نے پشاور دھماکے میں قیمتی انسانی جانوں کے ضیاع پر دکھ کا اظہار کرتے ہوئے زخمیوں کیلئے جلد صحت یابی کی دعا کی۔وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے پشاوردھماکےکی شدیدمذمت کرتے ہوئے جانی نقصان پر دکھ کا اظہار کیا۔پاکستان تحریک انصاف کے رہنما علی محمد خان نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں کہا کہ پشاور دیر کالونی مدرسے میں دھماکے کی شدید مذمت کرتےہیں، مرحومین کی مغفرت کے لئے دعاگو ہیں، دھماکاکرنیوالے دین اور ملک کے دشمن ہیں، چھوٹے بچوں اور معصوم طلبا کے قاتل انسان نہیں، ہر ممکن کوشش ہوگی دہشت گردوں کو جلد کیفر کردارتک پہنچایا جائے۔

یاد رہے آج صبح پشاور کے علاقے دیر کالونی میں مدرسےمیں جب بچے تعلیم حاصل کرنے میں مصروف تھے، معلم نے مائیک پر درس قرآن کا آغاز ہی کیا تھا کہ اچانک زورداردھماکے ہوا، دھماکہ اتنا روز دار تھا کہ پوری عمارت لرزاٹھی۔
دھماکے کے نتیجے میں اب تک 7 افراد شہید اور 70 زخمی ہوئے ، دھماکے کے زخمیوں میں زیادہ ترتعداد بچوں کی ہے۔