- الإعلانات -

بڑے بھائی حسن خان نیازی شجر سایہ دار تھے ، دنیا بھر سے تعزیت کرنے والوں کا مشکور ہوں ، ایس کے نیازی

حسن خان نیازی انتہائی شفیق ، محبت کرنے والی شخصیت کے حامل اور سماجی کام کرنے والے تھے، انہوں نے ہمیشہ میری توجہ سماجی امور کی جانب مبذول کرائی ،
سفاقی وزراء ، ممبران قومی و صوبائی اسمبلی ، حاضر اور ریٹائرڈ عسکری حکام، سیاسی و سماجی شخصیات کا شکر گزار ہوں جنہوں نے میرے غم میں شرکت کی اور مجھ سے گھر آکر اظہار تعزیت کیا
اہل میانوالی نے جس محبت کا اظہار کیا ان کا شکریہ ادا کرنے کیلئے میرے پاس الفاظ نہیں ، مجیب الرحمان شامی کا بھی شکریہ ادا کر تا ہوں ، اللہ تعالیٰ بحفظ و امان میں رکھے
حاجی حسن خان نیازی کے حق میں دنیا کے جتنے زیادہ ہاتھ بارگاہ الٰہی میں اٹھے یہ اس کا واضح ثبوت ہیں کہ حاجی حسن خان نیازی جنتی ہیں ،پروگرام ’’ سچی بات میں گفتگو
اسلام آباد (روزنیوزرپورٹ)میرے لئے بہت بڑا صدمہ تھا ، بس جو اللہ تعالیٰ کو منظور ہوتا ہے وہ ہی ہوتا ہے ، میں فوجی اور سیاسی ، سماجی شخصیات کا شکر گزار ہوں جنہوں نے تعزیت کی ، جتنے بھی وزراء ، ایم این اے ، ایم پی اے تشریف لائے ان کا شکر گزار ہوں ، اے پی این ایس ، سی پی این ای کا مشکور ہوں ، عارف نظامی مہتاب خان ، سلطان لاکھانی کا بھی شکر گزار ہوں ، متعدد ہمارے دوست و احباب میانوالی بھی پہنچ گئے ، حاضر سروس اور ریٹائرڈ فوجی افسران کا شکر گزار ہوں ، شامی صاحب کا بہت مشکور ہوں ، اللہ ان کو صحت دے ،انہوں نے ناظرین سے دعا کرائی ، جس محبت کا میانوالی کے لوگوں نے اظہار کیا وہ بہت لوگوں کے نصیب میں ہوئی ہے ، روالپنڈی میں قرآن خوانی کرائی ، تاکہ جو لوگ میانوالی نہ پہنچ سکے وہ ادھر شرکت کر سکیں ، ابھی غلام سرور خان صاحب تشریف لیکر آئے تعزیت کرنے والوں کا تانتا بندھا ہوا ہے ، حسن خان نیازی بہت اچھے بھائی تھے، وہ سماجی کاموں کی طرف توجہ دیتے تھے ، ان خیالات کا اظہار پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز کے چیف ایڈیٹر اور روز نیوز کے چیئرمین ایس کے نیازی نے روزنیوز کے پروگرام ’’ سچی بات ‘‘ میں گفتگو کرتے ہوئے کیا ، انہوں نے کہا کہ جتنا سکون سماجی کاموں میں ملتا ہے اور کہیں نہیں ملتا ، میانوالی گیا تو بے تہاشا محبت ملی، جن مدارس اور مساجد کیلئے کام کیا وہاں کے طالب مداوا بنتے ہیں ، دنیا بھر کے روز نامہ پاکستان اور روز نیوز کے بیورو آفسز میں تعزیتی اجلاس ہوئے ، مجھے یقین ہے کہ میرا بھائی جنتی ہو گا، اس کے حق میں اتنے زیادہ ہاتھ اٹھے ہیں یہ ان کے جنتی ہونے کی نشانی ہے ۔