- الإعلانات -

نوشکی:گاڑی پر حملہ ڈورن طیارے نے نہیں کیا تھا،سکیورٹی ذرائع

اسلام آباد سکیورٹی ذرائع نے نوشکی میں پراسرار طور پر حملے کا نشانہ بننے والی گاڑی پر امریکی ڈرون حملے کے امکانات کو رد کردیا ہے ۔
نجی ٹی وی کے مطابق سکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ ایرانی علاقے تفتان سے پاکستان آنے والی گاڑی کو ہفتہ کے روز آر پی جی راکٹ سے نشانہ بنایا گیا تھا اور گاڑی پر حملہ باقاعدہ منصوبہ بندی سے کیا گیا تھا ۔

سکیورٹی ذرائع نے اس امکان کی ترید کرتے ہوئے کہا ہے کہ افغان طالبان کے سربراہ پر امریکی ڈرون حملہ اور نوشکی میں گاڑی پر حملہ 2 الگ الگ واقعات ہیں تاہم دونوں واقعات کے وقت کی مماثلت کی وجہ سے ابہام پیدا ہواتھا ۔ افغان طالبان کے امیر ملا اختر منصور پر حملہ ساڑھے چار بجے ہوا جبکہ نوشکی میں گاڑی پر حملہ سہہ پہر 3 بجے ہوا ہے جو کہ آر پی جی راکٹ کا حملہ تھا۔