- الإعلانات -

ملا اختر منصور کی ہلاکت کی تصدیق نہیں ہوئی ،امریکی ڈرون حملہ پاکستان کی سا لمیت کے خلاف ہے :وزیر اعظم

لندن (مانیٹرنگ ڈیسک )وزیر اعظم  نواز شریف نے کہا ہے کہ امریکی ڈرون حملے میں طالبان رہنما ملا منصور اختر کی ہلاکت کی تصدیق نہیں ہوئی ،ڈرون حملہ پاکستان کی سالمیت کی خلاف ورزی ہے ۔عمران خان کے حوالے سے بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں جہاں جہاں جاتا ہوں ،وہ پیچھے پیچھے آجاتے ہیں ۔
لندن میں میڈ یا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ ابھی حتمی طور پر نہیں کہا جا سکتا کہ امریکی ڈرون حملے میں ملا اختر منصور ہلاک ہوئے ہیں یا نہیں ۔انہوں نے کہا کہ امریکی رہنما جان کیری نے کل رات ساڑھے دس بجے ٹیلی فون کر کے ڈرون حملے کی اطلاع دی تھی اور ان کے کمانڈر کی طرف سے آرمی چیف کو اطلاع دی گئی ۔ان کا کہنا تھا  کہ جان کیری نے اس واقعے کے بعد ہمیں اطلاع دی ،امریکی ڈرون حملہ پاکستانی سالمیت کی خلاف ورزی ہے جس پر امریکہ سے احتجاج کیا ہے ۔
انہوں نے کہا کہ میں جہاں جہاں جا کر جلسے کرتا ہوں ، عمران خان بھی پیچھے پیچھے وہاں جلسہ کرنے آجاتے ہیں ۔نواز شریف نے کہا کہ پاناما لیکس کے معاملے پر جتنا شور مچا یا گیا اب ان کا اپنا بھی کچا چھٹہ کھل گیا ہے ،اگر کوئی کسی پر الزام لگائے اور خود بھی صاف نہ ہوتو اپنی چیزیں بھی باہر آتی ہیں ۔ان کا کہناتھا کہ دوسروں کو اخلاق کا سبق دینے والوں کی اپنی اخلاقیات کہاں ہے ،اگر اپنا یہ حال ہو تو انسان کو سب سے پہلے اپنے گریبان میں جھانکنا چاہیے ۔انہوں نے کہا کہ میں ہمیشہ ترقیاتی کاموں کی بات کرتا ہوں ،پاکستان تیز ی سے آگے بڑھ رہا ہے ،اللہ چاہے گا تو اگلے دو سال میں مزید تیزی کے ساتھ آگے بڑھیں گے ۔انہوں نے کہا کہ پاکستان میں صنعتوں کو 100فیصد گیس اور بجلی دی جا رہی ہے ،بیرون ملک پاکستانی اپنے ملک میں آکر کاروبار کریں ۔
وزیر اعظم نے کہا کہ اپنے اثاثوں سے متعلق جو باتیں کمیشن میں کرنی چاہیے تھیں وہ قومی اسمبلی میں کردی ،اپنے اثاثوں سے متعلق تمام تفصیلات اسمبلی کے سامنے پیش کیں ۔انہوں نے مزید کہا کہ ٹی او آرز کمیٹی میں کک بیکس اور قرضے معاف کرانے والوں کے خلاف بھی کارروائی کی بات کی ،سیاسی طور پر اربوں روپے کے قرضے معاف کرانے والوں کو معاف نہیں کیا جائے گا