- الإعلانات -

فوری طور پر دوسرے وزیر اعظم کا تقرر کیا جائے ,سابق چیف جسٹس افتخار چوہدری

اسلام آباد  جسٹس اینڈ ڈیموکریٹک پارٹی کے سربراہ و سابق چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری نے وزیر اعظم نواز شریف کی جگہ دوسرا وزیر اعظم لانے کا مطالبہ کردیا۔
پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے افتخار محمد چوہدری کا کہنا تھا کہ آئین میں ڈپٹی وزیر اعظم کا کوئی تصور نہیں ہے وزیر اعظم کا چارج اسحاق ڈار کو دیا جانا غیر آئینی ہے وزیر خزانہ کے وزیر اعظم کی جگہ کام کرنے کا نوٹیفکیشن نہیں دیکھا اور اگر ایساکوئی نوٹیفکیشن ہے بھی تو آئین کی صریحاً خلاف ورزی ہے ۔وزیر اعظم اور صدر کی عدم موجودگی میں ان کا عہدہ سنبھالنے کا طریقہ کار موجود ہے اگر صدر ملک سے باہر جاتا ہے تو سینیٹ چیئرمین قائم مقام صدر بن جاتے ہیں ۔ جس طرح چیف جسٹس کی غیر موجودگی میں سپریم کورٹ کا سینئر وزیر قائم مقام ہوتا ہے اسی طرح وزیر اعظم کی غیر موجودگی میں سینئر وزیر ان کا عہدہ نہیں سنبھال سکتا ۔ وزیر اعظم سے ذاتیات کی بات نہیں ہے بلکہ آئینی بحران سے بچنے کیلئے فوری طور پر دوسرے وزیر اعظم کا تقرر کیا جائے ۔
انہوں نے کہا کہ اہم تقرری کرنی ہو تو وہ صرف وزیر اعظم ہی کرسکتا ہے جنگ یا ایمرجنسی میں صرف وزیر اعظم ہی صدر کو تجاویز بھجواسکتا ہے ، اگر وزیر اعظم بیمار ہیں اور اسی دن کوئی ایسا واقعہ پیش آجاتا ہے تو آپ کیا کریں گے ، وزیر اعظم کے صحت یاب ہونے کا انتظار نہیں کیا جاسکتا لہٰذا فوری طور پر دوسرے وزیر اعظم کا تقرر کیا جائے۔