- الإعلانات -

نظام حیدر آباد دکن امداد کیس پاکستان نے 68 سال بعد جیت لیا

اسلام آباد  نظام حیدر آباد دکن کی طرف سے پاکستان کو دی جانیوالی دس لاکھ پاؤنڈ امدادکا کیس پاکستان نے جیت لیا‘ بھارت نے پاکستان کیخلاف لندن میں یہ کیس68 سال قبل کیا تھا۔ تفصیل کے مطابق دفتر خارجہ پاکستان نے بتایا کہ پاکستان نے لندن کی عدالت میں بھارت سے یہ مذکورہ کیس جیت لیا ہے۔ نظام آف حیدر آباد دکن کی طرف سے پاکستان کیلئے 1 ملین پاؤنڈ امداد کا اعلان کیاگیا تھااور امدادی رقم اس وقت لند ن کے ویسٹ منسٹر بنک میں رکھی گئی تھی ویسٹ منسٹر بنک میں رکھی گئی متذکرہ بالا رقم کیخلاف بھارت نے دعویٰ کر دیا تھا کہ پاکستان کا اس رقم پر حق نہیں بنتا ‘پاکستان نے دلائل اور ثبوتوں کی بنیاد پر لندن کی عدالت میں بھارت سے یہ کیس جیت لیا ہے اور اس رقم کی مالیت اب 35ملین پاؤنڈ ہو چکی ہے۔برطانوی عدالت نے کہا کہ نظام حید رآباد دکن کی جمع کروائی گئی رقم میں پاکستان بھی قانونی حقدار ہے۔<br/> دفتر کارجہ کے ترجمان کے مطابق برطانوی عدالت کا فیصلہ پاکستان کے اصولی موقف کی تائید ہے‘ بھارت کے خلاف پاکستان کی فتح حق کی فتح ہے‘بھارت نے پوری کوشش کی کہ پاکستان کو فنڈز سے محروم رکھا جائے لیکن بھارت اپنے عزائم میں ناکام رہا اور عدالت کو قائل نہ کرسکا۔ عدالت نے 68 سال بعد پاکستان کو اس رقم کا قانونی حقدار قرار دیا ہے۔ایک ملین پاؤنڈ کی رقم اس وقت تقریباََ 1 ارب روپے پاکستانی بنتی ہے۔