- الإعلانات -

18ویں ترمیم پر سب کو مل بیٹھ کر’’ اجتہاد ‘‘کرنا چاہئے ، رانا تنویر

اسلام آباد (روزنیوزرپورٹ)پی اے سی کے چیئرمین رانا تنویر نے کہا کہ معاملات سدھرنے چاہئیں ، ادارے اپنی اپنی حدود سے نکل رہے ہیں ، وہ حدود متعین کرلیں تو حالات درست ہو سکتے ہیں ، بحران جو ہے وہ عمران خان اور پی ٹی آئی کی ہے جب ان کو حکومت مل گئی تو حکومت کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ پارلیمنٹ کو چلائیں ، معاملات آگے لیکر چلیں ، میں سمجھتا ہوں کہ جہاں نواز شریف کے بیانیے کی بات ہوتی ہے تو ان کی نا اہلی کی وجہ سے پی ڈی ایم کو فوقیت ملی ، ضمنی الیکشن میں انتظامیہ شامل ہے ، دھاندلی کا ذمہ دار کون ہ ، تو تمام تر انتظامیہ ملوث ہے ، مل کر دھاندلی کی گئی ،اس الیکشن میں انتظامیہ اور ان لوگوں نے کام کیا ہے ،یہاں تک گیلانی کا تعلق ہے اور شاہد خاقان نے جو بات کی ہے اس سے اتفاق کرتا ہوں ، ترجمان پاک فوج کہتا ہے کہ سیاست میں ہم الگ ہیں ، یہ بات ہ میں تسلیم کرنا چاہئے ، چیزوں کو سمجھنا ہو گا، بہتر کرنا ،درست کرنے کے بھی ذمہ دار ہیں ، جب یہ لوگ سیاست میں نہ ہوں گے تو یقینی طور پر لوگ ایسا نہیں کریں گے ، مصلحت کے تحت بات کرتے ہین، تو مفاہمت کی طرف چیزیں بڑھنا چاہئے ، جیتنے بھی لوگ تھے حکومت گرفتار کر کے اندر کر دیتی ہے ، جب آپ کسی کو دیوار سے لگائیں گے تو تلخی میں اضافہ ہوتا ہے ، بلوچستان کو دیکھ لیں وہاں بھی لسانی معاملات ہیں ، ہمارے سیاسی نظام ہیں سب کو موقع ملنا چاہئے ، ڈھائی سال میں چیزیں خراب ہوتی ہیں ، حقیقت بتا رہا ہوں کہ ایسی چیزں مرتب کریں کہ لوگوں کا نطام سے اعتماد اٹھتا چلا جائے ، پرویز رشید بے ضرر آدمی ہیں ، معلوم نہیں کہ ان کے ساتھ ایسا کیوں ہوا ہے ، انہوں نے کہا کہ حلیم عادل شیخ کے حوالے سے جو سندھ حکومت کے بیانات آئے ہیں میں سمجھتا ہوں کہ انکوائری ہونا چاہئے ، حالات خراب نہیں ہونے چاہئیں ،ہوش کے ناخن پنجاب ، کے پی اور وفاق میں بھی لینے چاہئیں ، صوبائی حکومت 18ویں ترمیم پر بیٹھ کر مسائل کو حل کرنا چاہئے ، اجتہاد کرسکتے ہیں ، 18ویں ترمیم کے حوالے سے سب کومل بیٹھنا اور اس حوالے سے اجتہاد کرنا چاہئے ، 18ویں ترمیم کے حوالے سے پارلیمانی کمیٹی بنا ئیں اور مسائل کو حل کریں ، فیڈریشن کو مضبوط ہونا چاہئے ،سیاسی جماعتیں اگر بیٹھ کر بات کریں اور چیزیں بہتری کی طرف جائیں تو کیا حرج جہے ، حکومت کی جانب سے اقدامات اٹھائے جائیں ، ساری چیزیں ہوسکتی ہیں کہ ذمہ داری سے آگے بڑھا جائے ، ساری جماعتیں عوامی مفاد کے تحت رجوع کریں کہ یہ یہ مسائل ہیں ، ان پر سارے اپنی اپنی رائے دیں چیزیں ایسی بھی ہیں نیازی صاحب آپ کی پٹیشن درست ہے ، اس پر بات ہو سکتی ہے لیکن لڑائی کے علاوہ کوئی بات ہی نہیں ہے ۔