- الإعلانات -

اسٹیبلشمنٹ عمران خان کے ساتھ ہے: وزیر دفاع

وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کا کہنا ہے کہ اسٹیبلشمنٹ وزیراعظم عمران خان کے ساتھ ہے۔ سینیٹ الیکشن میں حکومتی امیدوار حفیظ شیخ کی شکست کے بعد اپوزیشن کی جانب سے کہا جا رہا تھا کہ وزیراعظم ایوان کا اعتماد کھو چکے ہیں لہذا وزیراعظم عمران خان نے ایوان سے اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے کا فیصلہ کیا۔

آج صدر مملکت ڈاکٹر علوی کے تجویز پر اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر کی زیر صدارت قومی اسمبلی کا اجلاس بلایا گیا ہے تاہم حکومت مخالف اپوزیشن اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) نے اجلاس کے بائیکاٹ کا اعلان کر رکھا ہے۔ وزیراعظم کو اعتماد کا ووٹ دینے کے لیے پارلیمنٹ ہاؤس پہنچنے پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کا کہنا تھا آئین کے آرٹیکل 91 کی ذیلی شق 7 بہت بڑا آرٹیکل ہے۔

یہ بھی پڑھیں لائیو: اعتماد کا ووٹ: وزیراعظم عمران خان پارلیمنٹ ہاؤس پہنچ گئے

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ آج اپوزیشن کو اجلاس میں شریک ہونا چاہیے تھا، لوگوں میں جرات ہونی چاہیے کہ وہ سرعام کہیں کہ میں نے ووٹ نہیں دینا۔ وزیر داخلہ کا کہنا تھا یہ جمہوریت کا حسن ہےکہ عمران خان نے اعتماد کے ووٹ کے لیے اتنی جلدی فیصلہ کیا، آج کی جیت کے بعد وزیراعظم عمران خان نئی سیاسی زندگی کا آغاز کریں گے۔
شیخ رشید نے کہا کہ میں نے وزیراعظم عمران خان سے کہا ہے کہ بجٹ میں عام آدمی کو ریلیف دینے سے متعلق تجاویز شامل کی جائیں۔

شیخ رشید کا کہنا تھا کہ اسٹیبلشمنٹ عمران خان کے ساتھ ہے، وزیراعظم کی اسٹیبلشمنٹ کے دونوں حضرات سے ملاقات ہوئی ہے۔ وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کا کہنا تھا باجوہ صاحب کے الفاظ دہراتا ہوں جو بھی منتخب حکومت ہوگی پاک فوج اس کے ساتھ ہے۔