- الإعلانات -

وزارت داخلہ میں کروڑوں روپے کے کرپشن سکینڈل کا نیا انکشاف

اسلام آباد:وزارت داخلہ میں کروڑوں روپے کے کرپشن سکینڈل کا نیا انکشاف ہوا ہے نادرا حکام نے لائسنس فیس کی مد میں 64.27 ملین روپے قومی خزانہ میں جمع کرانے کی بجائے اپنے اکاﺅنٹس میں جمع کرا دیئے۔ نادرا حکام نے اب تک غیر قانونی طریقہ سے 5982 ممنوعہ بور کے لائسنس جاری کئے ہیں جبکہ 3881 غیر ممنوعہ بور اسلحہ لائسنس جاری کئے ہیں۔

لائسنس سے حکومت کی فیس 7500، نادرا فیس 3000، گورنمنٹ فیس 5000 ہے ممنوعہ بور لائسنس جاری کرنے سے آمدن 4483 ملین ہوئی ہے غیر ممنوعہ لائسنس کے اجراءسے آمدن 19.40 ملین ہوئی یہ رقم نادرا نے خود قبضہ میں لے رکھی ہے پارلیمنٹ میں پیش کی گئی تفصیلات کے مطابق حکومت نے اس کا نوٹس لیتے ہوئے نادرا حکام کو طلب کر لیا ہے اور ہدایت کی گئی ہے کہ وہ رقم خزانہ میں جمع کرائے اور اب تک رقم جمع نہ کرانے والے افسران کی نشاندہی کی جائے اور انہیں سزا دی جائے۔

وفاقی وزیرداخلہ چوہدری نثار علی خان نادرا کے معاملے مٰیں کافی سرگرم ہیں لیکن ابتدائی طورپرخبررساں ایجنسی آن لائن کی  اس خبر پر وزارت داخلہ کا موقف سامنے نہیں آسکا۔