- الإعلانات -

کراچی: پولیس موبائل پرحملہ، ایک اہلکارشہید،5دہشتگردہلاک

کراچی : لیاری میں پولیس موبائل پردہشتگردوں کے حملہ سے ایک اہلکارشہیدجبکہ رینجرزسے مقابلہ میں عزیربلوچ گروپ کے 2مطلوب دہشتگردوں سمیت 5مارے گئے۔تھانہ چاکیواڑہ کے ایس ایچ اوخان محمدنے بتایاکہ اہلکارموبائل میں گشت کررہے تھے کہ موٹرسائیکل سوار2دہشتگردوں نے فائرنگ کردی،گولیاں لگنے سے 38 سالہ ہیڈ کانسٹیبل پرویزشدیدزخمی ہوگیا،اسے ہسپتال منتقل کیاگیاتاہم جانبرنہ ہوسکا۔ پولیس نے شبہ ظاہرکیا کہ حملہ میں لیاری گینگ وار کے کارندے ملوث ہیں۔رات گئے رینجرز کی بھاری نفری نے لیاری تغلق لین چاکیواڑہ میں چھاپہ مارا تو وہاں موجود دہشت گرد وں نے فائرنگ کردی اس دوران رینجرز کی جانب سے بھی فائرنگ کی گئی۔ رینجرز ترجمان کے مطابق دو طرفہ فائرنگ کے نتیجے میں گینگ وار کے تین ملزم مارے گئے جبکہ دیگر فرار ہوگئے۔
دریں اثنا رینجرزنے کالعدم امن کمیٹی کے دہشتگردوں کی موجودگی سے متعلق انٹیلی جنس اطلاع پرلیاری کے علاقہ نوالین میں ٹارگٹڈکارروائی کی،اس دوران علاقہ کے تمام داخلی وخارجی راستے سیل کر دئیے گئے اور جونہی اہلکاروں نے دہشتگردوں کے ٹھکانے کی طرف پیش قدمی کی توانہوں نے فائرنگ کرتے ہوئے فرارکی کوشش کی،تاہم رینجرزکی فائرنگ سے 2دہشتگردہلاک اور2بھاگنے میں کامیاب ہوگئے ،مرنے والے دہشتگردوں سے بھاری اسلحہ برآمدہوا،بعدازاں رینجرزنے لاشیں پولیس کے حوالے کردیں،اس ضمن میں ایس ایچ او کلاکوٹ ایاز خان نے بتایاکہ ہلاک دہشتگردوں کی شناخت 30 سالہ وقار ولد یوسف اور 26 سالہ وقاص ولد اقبال کے ناموں سے ہوئی،یہ عزیر بلوچ گروپ کے اہم کمانڈر استاد تاجو گروپ کیلئے کام کرتے تھے جبکہ پولیس اہلکاروں کی ٹارگٹ کلنگ ، اغوابرائے تاوان اور بھتہ خوری کی متعدد وارداتوں میں پولیس کو مطلوب تھے۔
دریں اثنارینجرز نے اورنگی ٹاﺅن ،شاہ فیصل کالونی،جمشیدٹاﺅن، گلشن اقبال، گڈاپ اور ملیرکے علاقوں میں مختلف کارروائیوں کے دوران ایم کیوایم عسکری ونگ کے 2ٹارگٹ کلرزسمیت8ملزم اور3مشتبہ افرادگرفتارکرکے اسلحہ برآمدکرلیا،ابتدائی تفتیش میں متحدہ سے وابستہ ٹارگٹ کلرزنے قتل کی متعدد وارداتوں کااعتراف کرلیاجبکہ انہیں مزیدتحقیقات کیلئے نامعلوم مقام پرمنتقل کردیاگیا۔