- الإعلانات -

پولیس موبائل کی عمران خان کی بہن کی گاڑی کو ٹکر، ہراساں بھی کیا،: ڈاکٹر عظمیٰ

لاہور پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کی ہمشیرہ ڈاکٹر عظمیٰ کو گلبرگ 3 کے علاقے میں پولیس اہلکاروں نے ہراساں کیا اور بدتمیزی کی۔ڈاکٹر عظمیٰ کا کہنا ہے کہ پولیس اہلکار اور موبائل مریم نواز شریف کے پروٹوکول کی تھیں اور مریم نواز نے مجھے دیکھا بھی تھا۔  ڈاکٹر عظمیٰ نے کہا کہ وہ گلبرگ 3 کے علاقے سے گزر رہی تھیں کہ اس دوران ایک کار نے ان کی گاڑی کو سائیڈ پرکیا اور دوسری نے سامنے سے زوردار ٹکر ماری۔ انہوں نے کہا کہ واقعے کے بعد جب میں گاڑی سے باہر نکلی تو پولیس موبائل سے مسلح افراد باہر نکلے اور انہیں ہراساں کیا۔
انہوں نے کہا کہ جب انہوں نے یہ جاننے کی کوشش کی کہ یہ سب کیا ہو رہا ہے تو صرف اتنا ہی کہا گیا کہ وی وی آئی پی موومنٹ ہو رہی ہے گاڑی روک لیں۔ ان کا کہنا تھا کہ جب میں نے خود سے پتہ کرانے کی کوشش کی تو معلوم ہوا کہ یہ کسی اہم شخصیت کے پروٹول کیساتھ ہیں اور بعدازاں یہ پتہ چلا کہ وہ اہم شخصیت کوئی اور نہیں بلکہ مریم نواز شریف ہیں۔
ڈاکٹر عظمیٰ نے کہا کہ وزیراعظم نوازشریف کی بیٹی مریم نواز شریف کار میں بیٹھی تھیں اور انہوں نے مجھے دیکھا بھی۔ انہوں نے میرے بچوں کو مارنے کی کوشش کی ہے۔ آج سے پہلے دوسروں کیساتھ اس طرح کے واقعات ہوتے تھے لیکن آج جب خود کے ساتھ یہ واقعہ پیش آیا ہے تو معلوم ہوا ہے کہ یہ کتنا تکلیف دہ ہوتا ہے۔