- الإعلانات -

آزاد کشمیر، پی پی اور ن لیگ میں تصادم، 3جاں بحق 8 زخمی

حو یلی آزاد کشمیر میں پیپلز پارٹی اور ن لیگ کے کارکنوں میں تصادم سے تین افراد جاں بحق اور آٹھ زخمی ہوگئے۔ ن لیگ کی اپیل پر واقعے کے خلاف آج آزاد کشمیر میں یوم احتجاج منایا جا رہا ہے۔ نواز شریف کے معاون خصوصی آصف کرمانی کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی پرتشدد کارروائیوں پر اتر آئی ہے۔آزاد کشمیر کے ضلع حویلی کے علاقے پلنگی میں ہونے والے قانون ساز اسمبلی کے انتخابات کے سلسلے میں کارنر میٹنگ جاری تھی کہ پیپلزپارٹی اور ن لیگ کے کارکنان کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا جس سے موقع پر ایک شخص ہلاک اور متعدد زخمی ہو گئے تھے جن میں سے کئی کی حالت تشویشناک تھی۔ آج زخمیوں میں سے مزید دو افراد دوران علاج دم توڑ گئے جس سے ہلاکتوں کی تعداد تین ہو گئی ہے۔ زخمیوں کو ابتدائی طبی امداد ڈی ایچ کیو اسپتال باغ میں دی گئی تھی جہاں سے بعد ازاں انہیں اسلام آباد منتقل کردیا گیا۔فائرنگ کے بعد علاقے کی صورتحال کشیدہ ہونے پر فوج طلب کرلی گئی ہے۔ مشتعل افراد کی جانب سے مختلف بازاروں میں درجنوں دکانیں جلادی گئیں۔  واقعے کے خلاف ن لیگ کی جانب سے آج آزاد کشمیر میں یوم احتجاج منایاجارہاہے۔ آزاد کشمیرمیں کاروباری مراکز بند ہیں۔ جس کے باعث لوگ گھروں میں محصور ہیں۔  فائرنگ کے واقعہ کے دو مقدمات تھانہ کہوٹہ میں درج کرلئے گئے ہیں۔ ایف آئی آر میں پچاس سے زائد افراد کو نامزد کیاگیاہے۔

وزیراعظم نواز شریف کے معاون خصوصی آصف کرمانی کا کہنا ہے کہ پیپلز پارٹی کو آزادکشمیر کے انتخابات میں شکست نظر آرہی ہے جس سے وہ پرتشدد کارروائیوں پر اتر آئی ہے