- الإعلانات -

کینسر کا مہنگا ترین علاج پاکستان میں بلکل مفت

کراچی : جناح اسپتال کے ہیڈ آف سائبر نائف وشعبہ ریڈیالوجی کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹرطارق محمود کا کہنا ہے کہ سائبر نائف ریڈی ایشن سے کینسر کا علاج کیا جاتا ہے ، یہ بہت مہنگا علاج ہے لیکن ہم بالکل مفت کرتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق جناح اسپتال کے ہیڈ آف سائبر نائف وشعبہ ریڈیالوجی کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹرطارق محمود نے کہا سائبرنائف روبوٹ کینسر کے اسٹیج ون اور ٹو پر استعمال کیاجاتاہے، 2012 میں پہلا یونٹ اور 2019 میں دوسرا یونٹ لگا۔

پروفیسرطارق محمود کا کہنا تھا کہ سائبر نائف ریڈی ایشن سے کینسر کا علاج کیا جاتا ہے ، یہ بہت مہنگا علاج ہے لیکن ہم بالکل مفت کرتے ہیں،ہم صرف اسی کا علاج کرتے ہیں جس کوفائدہ پہنچنے کا امکان ہو ۔ انھوں نے کہا کہ مختلف اقسام کے کینسرمیں سائبر نائف کا استعمال کیا جاتاہے، پورے پاکستان میں تقریبا اس کے75 سے 78 یونٹ ہیں لیکن پورے پاکستان میں اس علاج کے لیے 440یونٹ ہونے چاہیے۔

خیال رہے سائبر نائف روباٹک ریڈیالاجی یونٹ دنیا کے کئی ترقی یافتہ ممالک میں نایاب ہے اور صرف تین سو پچاس کے قریب یونٹ دنیا کے مختلف ممالک میں موجود ہیں اور پاکستان میں سندھ واحد صوبہ ہے جہاں کینسر کے علاج کے لیے سائبر نائف روباٹک سرجری کی سہولت موجود ہے۔ دنیا کے کسی ملک میں سائبر نائف روباٹک کے زریعے علاج مفت نہیں کیاجاتا اور مریض سے نوے ہزار سے ایک لاکھ بیس ڈالر تک وصول کیے جاتے ہیں۔