- الإعلانات -

حکومت مہنگائی کو کنٹرول کرے ، انرجی سیکٹر پر توجہ دے ، پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں کنڑول کی جائیں

اسلام آباد(روزنیوزرپورٹ)پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز کے چیف ایڈیٹر اور روزنیوز کے چیئرمین ایس کے نیازی پروگرام ’’ سچی بات ‘‘ میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پی ڈی ایم کا آپس کا جھگڑا حکومت کو مضبوط کررہا ہے ،پیپلزپارٹی کے اقدامات بھی تحریک انصاف کی حکومت کو فائدہ پہنچا رہے ہیں ، دبے دبے لفظوں میں چیئرمین سینیٹ کی سیٹ بھی پیپلز پارٹی کی ہی بنتی ہے ، جب اپوزیشن کے اندر تفریق اور تقسیم ہو گی تو پھر یقینی طور پر حکومت مفاد میں رہے گی ، اپوزیشن مضبوط ہو تو حکومت پر بھی دباءو ہوتا ہے کہ وہ کام کرے ، انہوں نے کہا کہ ڈسکہ کے الیکشن دیکھ لیں عوام کا ٹرن اوور کم رہا ، عوام آخر اتنی بدل کیوں ، ایسے حالات رہے تو جنرل الکشن میں عوام ووٹ ڈالنے کیلئے بہت کم تعداد میں نکلے گی ، ایک سوال کے جواب میں ایس کے نیازی نے کہا کہ سید خورشید شاہ بہت بڑے لیڈر ہیں لیکن ان کو ناکردہ گناہوں کی سزا مل رہی ہے ، ہماری سپریم کورٹ سے اپیل ہے کہ وہ ان کی ضمانت لے ، پیپلز پارٹی سے بھی اپیل کرتے ہیں کہ وہ اس حوالے سے کام کرے ، انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے عوام کو چھت فراہم کرنے کے سلسلے میں کام کا آغاز ہو چکا ہے ، عوام کے خوابوں کو تعبیر میں تبدیل کرنے کا وقت آگیا ہے ، غریب آدمی کو چھت فراہم کرنا بہت بڑی اور عظیم نیکی ہے ، انہوں نے کہا کہ مجھے اچھی طرح یاد ہے کہ عمران خان ای سیون میں رہتے تھے ، مجھ سے ملاقات کرنے کیلئے آتے تو میں انہیں واپس چھوڑنے جایا کرتا تھا، جب وہ گاڑی میں جا رہے ہوتے تھے تو فٹ پاتھ پر بیٹھے اور سوئے ہوئے لوگوں کو دیکھ کرکہتے کہ نیازی صاحب میں جب بھی وزیر اعظم بنا تو میں ان غریب لوگوں کو چھت فراہم کروں گا، اللہ تعالیٰ کا لاکھ لاکھ شکر ہے اب یہ کام شکر ہے کہ اب یہ کام شروع ہو چکا ہے ، اگر وزیر اعظم عمران خان لاکھ ڈیڑھ لاکھ گھر غریب عوام کو بنا کر دیتے ہیں اور مہنگائی کو بھی کنٹرول کر لیتے ہیں تو آئندہ آنے والا انتخاب بھی عمران خان کا ہی ہوگا، انہوں نے کہا کہ عمران خان انتہائی خوش قسمت آدمی ہیں کہ انہیں نئے پاکستان کا چیئرمین ایک ایسا سپاہی ملا ہے جو کوئی تنخواہ نہیں لیتا اور جہاں جاتا ہے وہ اپنی جیب سے خرچ کرتا ہے ، یہ چیئرمین غریبوں کو مکان فراہمی کے کام کو ایک عبادت سمجھ کر کر رہے ہیں ، انتہائی نیک دل اور غیر سیاسی آدمی ہیں اور باقاعدہ ایک جذبے کے تحت کام کررہے ہیں ، انہوں نے کہا کہ اس وقت مہنگائی ، انرجی اور پیٹرولم مصنوعات کی قیمتوں میں بہت اضافہ ہے اس کو کنٹرول کرنا ہو گا، ایف بی آر کا معاملہ بھی اچھا جا رہا ہے ، اب لوگوں کو گھر بیٹھے ری بیٹ مل جاتا ہے ، انہوں نے کہا کہ توانائی سیکٹر پر توجہ دینے کی ضرورت ہے ، اب بہترین بات یہ ہے کہ حکومت جو سبسڈی دے رہی ہے وہ حق دار تک پہنچ رہی ہے ۔