- الإعلانات -

بھارت کی پالیسیاں امن کی راہ میں رکاوٹ ہیں، دفتر خارجہ

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ کشمیر کے تنازع پر کئی جنگیں ہو چکی ہیں۔اس مسئلے کا حل صرف مذاکرات سے ہی ممکن ہے ۔عالمی برادری مسائل کے حل کے لئے بھارت کو پاکستان سے مذاکرات کے لئے دباؤ ڈالے۔

پاکستان نے مقبوضہ کشمیر کے شہریوں پر بھارتی فوج کی زیادتیوں کی ہر فورم پر پُرزور مذمت کی ہے۔کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کو دہشت گردی سے جوڑنا بھارت کا منفی پروپیگنڈہ ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نفیس زکریا نےہفتہ وار بریفنگ میں کہا کہ بھارتی فوج اسپتال اور زخمیوں پر بھی حملے کر رہی ہے جو غیر انسانی فعل ہے۔

کشمیر کے معاملے پر جنگیں ہو چکی ہیں ،حل صرف مذاکرات سے ہی ممکن ہے ۔ عالمی برادری بھارت پر مذاکرات کے لیے زور ڈالے۔

سلامتی کونسل کی مستقل رکنیت کے لیے شرط ہے کہ ممبر ملک عالمی امن کے لیے مثبت کردار ادا کرے۔ بھارت سلامتی کونسل کی مستقل رکنیت کی شرائط پر پورا نہیں اترتا۔

بھارت کا ٹریک ریکارڈ رہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کی گئیں ۔ بھارت کی پالیسیاں خطے میں قیام امن کی راہ میں رکاوٹ ہیں ۔

امریکی ایوان نمائندگان کی کمیٹی میں پاکستان کے بارے میں ہونے والی بحث پر ترجمان کا کہنا تھا کہ زلمے خلیل زاد کی باتوں کو کہیں بھی سنجیدگی سے نہیں لیا جاتا۔

پاکستان اور امریکہ کے درمیان دہشتگردی کے مسئلے پر تعاون جاری ہے۔پاکستان کی دہشتگردی کے خلاف کوششوں پر سوال نہیں اٹھایا جا سکتا