- الإعلانات -

بھارتی مظالم،پاکستان کا 19 جولائی کو یوم سیاہ منانے کا اعلان

وزیر اعظم کی صدارت میں ہونیوالے وفاقی کابینہ کےخصوصی اجلاس میں بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں ڈھائے جانیوالے مظالم کے خلاف 19 جولائی منگل کو یوم سیاہ منانے اور مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر جلد پارلیمنٹ کا مشترکہ اجلاس بلانے کا فیصلہ کیا ہے۔

وزیر اعظم نوازشریف کی صحت یابی کے بعد کابینہ کا پہلا اجلاس گورنر ہاؤس لاہور میں ہوا ،وزیر اعظم جاتی امرہ سے سخت سکیورٹی میں گورنر ہاؤس پہنچے۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نواز شریف نے کہا کہ ہندوستان کی 7 لاکھ فوج کشمیریوں کی تحریک کو دبا نہیں سکی، بھارتی ظلم کشمیریوں کی تحریک کو مزید تقویت دے گا اور کشمیری عوام اپنا حق لے کر رہیں گے۔

انہوں نے کہا کہ برہان وانی آزادی کا سپاہی تھا اور بھارت طاقت سے کشمیریوں کی تحریک کو دبا نہیں سکے گا ،میں اور پاکستانی قوم کشمیری بھائیوں کے ساتھ ہیں، پاکستان کشمیریوں کی سیاسی اخلاقی اور سفارتی حمایت جاری رکھے گا۔وزیر اعظم نے ہدایت کی کہ تمام ادارے بھارتی بربریت پر عالمی ضمیر کو جگائیں، اجلاس میں سیکرٹری خارجہ اعزاز چوہدری نے کشمیر کی صورتحال پرکابینہ کو بریفننگ دی۔اس سے قبل کابینہ نے عبدالستار ایدھی ،امجد صابری اور کشمیری شہدا کےلیے فاتحہ خوانی کی گئی جبکہ سعودی عرب ،ترکی،بنگلہ دیش،انڈونیشیا اور فرانس میں پیش آنیوالے واقعات کی مذمت کے ساتھ ساتھ ان واقعات پر دکھ کا اظہارکیا گیا