- الإعلانات -

اسد کھرل کو فرار ہونے سے روکنے کے لیے ہوائی اڈوں پر الرٹ کردیا

سندھ کی اہم حکومتی شخصیت کے مبینہ فرنٹ مین اسد کھرل کو بیرون ملک فرار ہونے سے روکنے کے لیے ہوائی اڈوں پر الرٹ کردیا گیا، اسد کھرل اور طارق سیال نے سندھ ہائی کورٹ میں درخواست دائر کردی، وزیرداخلہ سندھ سہیل انور سیال لاڑکانہ میں صلح صفائی کی کوششوں میں مصروف ہیں۔اسد کھرل اور طارق سیال نے سندھ ہائی کورٹ لاڑکانہ بینچ میں درخواست دائر کردی، درخواست میں ڈی آئی جی، ایس ایس پی، کمانڈنگ آفیسررینجرز، ڈپٹی ڈائریکٹرآئی بی، ڈپٹی ڈائریکٹرنیب سکھر، باقرانی اور مارکیٹ تھانوں کے انچارج پر ہراساں کرنے کا الزام لگایا ہے، عدالت نے فریقین سے 28جولائی تک وضاحت طلب کرلی ہے۔

دوروز قبل اسد کھرل کو اربوں روپے کی مالی بے ضابطگیوں کے الزامات کے تحت حساس ادارے کے اہلکاروں نے لاڑکانہ سے گرفتار کیا تھا، صوبائی وزیر کے بھائی طارق سیال اور ان کے حامیوں نے مبینہ طور پر اسد کھرل کو مقامی پولیس کی مدد سے چھڑا کر فرار کرادیا تھا۔

اسد کھرل پر سندھ کے مختلف اضلاع میں سرکاری ٹھیکوں میں اربوں روپے کی کرپشن کا الزام ہے، ملزم کو بیرون ملک فرار ہونے سے روکنے کے لیے تمام ایئرپورٹ پر امیگریشن حکام کو الرٹ کردیا گیا ہے۔وزیرداخلہ سندھ کے بھائی طارق سیال نے دعویٰ کیا ہے کہ اسد کھرل کی رہائی کے مذاکرات ایس ایس پی اور رینجرز کے کرنل کے درمیان ہوئے، طارق سیال کا کہنا ہے کہ اسد کھرل اس وقت کہاں ہے انہیں نہیں معلوم