- الإعلانات -

علی گیلانی کے 4نکات کی حمایت کرتے ہیں:مولانا فضل الرحمان

جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ اور کشمیر کمیٹی کےچیئرمین مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ مسئلہ کشمیرکےحل کیلئے فوری اقدامات کیے جائیں،مسئلہ کشمیرکےحل سےہی خطےمیں پائیدارامن ممکن ہے،علی گیلانی کے پیش کردہ 4نکات کی حمایت کرتے ہیں۔ قومی اسمبلی کی خصوصی کمیٹی برائےکشمیرکااجلاس ختم ہونے کے بعد مولانا فضل الرحمان نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ کشمیرکمیٹی کےاجلاس میں بھارتی مظالم کی مذمت کی گئی،خطےمیں ہماری امن کی کوششوں کوکمزوری نہ سمجھا جائے، مسئلہ کشمیر اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں حل کیاجائے۔ انہوں نے بتایا کہ کمیٹی کےتمام اراکین نےمتفقہ طورپرقراردادکی منظوری دی، حکومت پارلیمنٹ کےخصوصی اجلاس میں مسئلہ کشمیرپربحث کرائے،آئندہ کےلائحہ عمل پرتجاویز کے لیےخصوصی کمیٹی تشکیل دے دی ہے،کوشش کی جائےگی آئندہ 10روزمیں اگلااجلاس طلب کیاجائے۔

مولانافضل الرحمان کا کہنا تھا کہ اقوام متحدہ میں طویل خاموشی کےبعدمسئلہ کشمیرکواٹھایاگیا،مسئلہ کشمیرکوچیلنج کے طور پر قبول کیا،برطانوی پارلیمنٹ میں پاکستان کےحق میں آوازبلندہورہی ہے،امن کےدشمن یادرکھیں پاکستان ایٹمی طاقت ہے، کشمیریوں کےمسئلےپرمؤثر اقدامات کیےجائیں گے۔

انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ کاخصوصی اجلاس بلانےکی حمایت کرتےہیں،عالمی برادری کوآگاہ کرنے کے لیے بین الاقوامی کانفرنس منعقدکی جائے، آزادی کےتمام شہداء بالخصوص برہان وانی کوسلام پیش کرتےہیں،مقبوضہ کشمیرمیں آج انسانی حقوق کامسئلہ ہے،انسانی حقوق کےعالمی اداروں کوبھارتی مظالم سےآگاہ کریں گے۔