- الإعلانات -

ملک بھر میں حلال فوڈز اتھارٹی کے قیام اور قوانین پر سنجیدگی سے غور شروع

اسلام آباد; وزارت داخلہ نے حلال فوڈ اتھارٹی کے قیام وقوانین کیلئے سنجیدگی سے غور شروع کردیا ہے،آئندہ قومی اسمبلی وسینیٹ اجلاس میں قانو ن منظور کرانے کا قوی امکان ہے۔ وفاقی وزیر چوہدری نثارعلی خان نے ملک بھر میں حلال فوڈز اتھارٹی کے قیام اور قوانین پر سنجیدگی سے غور شروع کردیا ہے اور انہوں نے اس سلسلہ میں وزیراعظم محمد نوازشریف کو بھی زبانی آگاہ کیا ہے کہ ملک بھر میں حرام اشیاء کے کنٹرول اور حلال اشیاء سے متعلق ایک ایسا بااختیار ادارہ بنایا جانا وقت کی اہم ضرورت ہے تاکہ مکروہ دہندہ کرنے والے افراد کے گرد گھیرا تنگ کیا جاسکے۔ذرائع کے مطابق وزیراعظم نے بھی وفاقی وزیر داخلہ کو مثبت جواب دیا اور جلد ایک قانون بنانے کیلئے بل تیار کرنے کا کہا،جس پر وزارت داخلہ نے حلال فوڈز اتھارٹی ادارہ اور اس سے متعلق قوانین پر سنجیدگی سے غور شروع کردیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق وزارت داخلہ نے جس تیزی سے کام شروع کیا ہے توقع کی جاتی ہے کہ ترمیم کے ساتھ آئندہ اسمبلی اجلاس میں ترمیم شدہ قانون اور ادارے کے قیام کا بل پیش کردیا جائیگا۔واضح رہے کہ اس سے قبل قبروں سے مردے نکال کر کھانے والے افراد کے مقدمات دہشتگردی کی عدالت میں پیش کئے گئے تھے مگر مناسب قانون نہ ہونے کے باعث ان کو سزائیں دینے میں عدالت کو مشکلات درپیش آئیں تھے