- الإعلانات -

طلبہ کی تربیت اور تعلیم معاشرے کے لیے ناگزیر ہے، نور الحق قادر، وفاقی وزیر

وفاقی وزیر برائے مذہبی امور و بین المذاہب ہم آہنگی نور الحق قادری نے معاشرے میں مثبت تبدیلی لانے کے لیے بچوں کی تربیت اور تعلیم پر زور دیا۔ معاشرے کو بڑے پیمانے پر بچوں کی ذہن سازی کی ضرورت ہے۔ رحمت اللعالمین جیسی تقریبات میں بچوں کی شمولیت سے معاشرے کو فائدہ ہوگا۔
وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ تعلیمی ادارے پاکستان کے مستقبل کی تعمیر کے لیے سکولوں میں اسلامی تعلیم کو یقینی بنائیں۔ وہ ایمز سکول اینڈ کالج کے زیر اہتمام رحمت اللعالمین کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے مری ایکسپریس وے اسلام آباد میں ۔ تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔ تقریب میں جناب مولانا امین شہیدی، سید محمد علی گیلانی پیر بری امام، حمد خواں جناب نجم شیراز، مسلم ہینڈز کے جناب ریحان طاہر، سید امتیاز علی رضوی، سی ای او اور پرنسپل، دی ایمز اسکول اینڈ کالج، سیدہ عصمت زہرہ، طلبا اور دیگر مہمانوں نے شرکت کی۔
سے زائد طلباہ نے نعت کے مقابلے میں حصہ لیا اور حضور (ص) کی خدمت میں نعت پیش کی۔20
وفاقی وزیر نور الحق قادری نے بچوں میں شیلڈز اور نقد انعامات تقسیم کرتے ہوئے کہا کہ حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی حیات طیبہ تمام انسانوں کا مرکز و محور ہے۔ ہمیں مسلمان ہونے کے ناطے موجودہ دنیا اور اس کے بعد کی ترقی کے لیے حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کے اصولوں پر عمل کرنا چاہیے۔
پیر بری امام سید محمد علی گیلانی نے کہا کہ قرآن مجید اسلام کی مقدس کتاب ہے اور ہمارا فرض ہے کہ ہم قرآن کو ترجمہ کے ساتھ سیکھیں تاکہ اسلام کے اسباق سیکھیں اور دوسروں کو بھی اسلام کے اصولوں کو اپنانے کی ترغیب دیں۔ طلبہ دنیا میں اسلام کی ترویج کا ستون ہیں۔ انہیں اپنی توانائیاں اسلام کی تعلیم اور ترویج میں صرف کرنی چاہئیں۔
دی ایمزسکول اینڈ کالج کے سی ای او اور پرنسپل سید امتیاز علی رضوی نے کہا کہ مسلم دنیا کو متحد ہو کر اسلام اور قرآن کے اصولوں پر عمل کرنا چاہیے۔
اسکول آکسفورڈ گرامر، عثمانیہ ٹیکنیکل اور بابر پبلک اسکول نے بالترتیب پہلی، دوسری اور تیسری ٹرافی جیتی۔
سید امتیاز علی رضوی نے بچوں کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے اور رحمت اللعالمین کانفرنس میں شرکت کرنے پر نور القادری اور دیگر معزز مہمانوں کی شرکت کو سراہا۔