- الإعلانات -

ٹرانسپیرنسی رپورٹ : اپوزیشن جماعتیں میدان میں آگئیں سینیٹ میں بحث کرانے کا مطالبہ کر دیا

ن لیگ نے ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ کو حکومت پر فردجرم قرار دے دیا جب کہ پیپلز پارٹی نے رپورٹ پر سینیٹ میں بحث کرانے کا مطالبہ کردیا۔

ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ پر سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا کہ وزیراعظم اور وزرا ملک میں کرپشن بڑھنے کا جواب دیں، ہر محکمے میں کرپشن کی فہرست موجود ہے، افسران کی تبدیلی کی وجہ بھی کرپشن ہے۔

ترجمان (ن) لیگ مریم اورنگزیب نے کہا کہ عمران صاحب آپ کی کرپشن کااعمال نامہ آنے کے بعدآپ سڑکوں پرنہیں نکلیں گے بلکہ جیل جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیں

شاہد خاقان عباسی کہتے ہیں سارے چور کابینہ میں بیٹھے ہیں

دوسری جانب پیپلزپارٹی کی نائب صدر شیری رحمان نے ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ پر سینیٹ میں بحث کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔شیری رحمان کا کہنا تھاکہ یہ حکومت کارکردگی پرنہیں بلکہ چور ڈاکو کرپشن کے بیانیے پر چلی تھی، ٹرانسپیرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ حکومت کے تابوت میں آخری کیل ہے، آپ نے کرپشن میں بھی سارے ریکارڈ توڑ دیے ہیں، ماضی کی حکومتوں کو چھوڑیں، اپنا جواب دیں۔

پیپلزپارٹی کے رہنما سینیٹر مصطفیٰ نوازکھوکھرنے کہا عمران خان نےکہا تھا کہ وہ ملک سے کرپشن ختم کریں گے، عمران خان خود کہتےرہے کہ ملک میں مسائل کی جڑکرپشن ہے۔