- الإعلانات -

خیبر ایجنسی: زمینی اورفضائی کارروائی، 9دہشتگرد مارے گئے

خیبر ایجنسی : زمینی اورفضائی کارروائی میں نو دہشتگرد مارے گئے جبکہ دہشتگردوں کے چھ ٹھکانے اور اسلحے کا بڑا ذخیرہ تباہ کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں دہشتگردوں پر زمین تنگ کردی گئی ہے، آئی ایس پی آر کے مطابق خیبر ایجنسی میں دہشتگردوں کیخلاف زمینی اور فضائی کارروائی کی گئی، اس کارروائی میں نو دہشتگرد مارے گئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق کارروائی کے دوران دہشگردوں کے چھ ٹھکانے اور اسلحے کا ذخیرہ بھی تباہ ہوا۔

دوسری جانب کوئٹہ کے علاقے خروٹ آبادمیں کومبنگ آپریشن کے دوران تیرہ مشتبہ افراد پکڑے گئے، ایف سی کے مطابق خروٹ آباد اوراسکے ملحقہ علاقے میں رات بھر تابڑ توڑ چھاپے مارے گئے ،گھر گھر تلاشی کے دوران متعدد ملزمان کو گرفتار کرلیا گیا، جن کے قبضے سے چوبیس پسٹلز، دو رائفلز اور شارٹ گن برآمد ہوئی۔

اس سے قبل پاک فوج کے طیاروں نے خیبر ایجنسی کے علاقوں بابر کچکول، نرے نائو، طور سپیرا ودیگر میں طیاروں کے ذریعے بمباری کی، جس کے نتیجے میں دہشت گردوں کے آٹھ ٹھکانے تباہ ہوگئے اور 11دہشت گردے مارے گئے۔

واضح رہے کہ چار روز قبل پاک افغان بارڈر پر سیکورٹی فورسز نے دہشتگردوں کی نقل و حرکت روکنے کے لئے آپریشن کا آغاز کیا تھا، آئی ایس پی آر کے ترجمان کے مطابق پاک افغان سرحد پر خیبر ایجنسی کی وادی راجگال میں پاک فوج کے اضافی دستے تعینات کر دیئے گئے ہیں، جس کا مقصد دہشت گردوں کی سرحد پر نقل وحرکت پر نظر رکھنا اور ان کو روکنا ہے۔