- الإعلانات -

کراچی:نجی ٹی وی چینل پر حملہ، انتظامیہ کا سیاسی جماعت پر الزام

صدر میں واقع مدینہ شاپنگ مال میں مشتعل افراد داخل ہو گئےجنہوں نے زینب مارکیٹ میں بھی توڑ پھوڑکی، جبکہ زینب مارکیٹ اور اطراف میں واقع دکانیں بند کرادیں۔واقعے میں کئی افراد کے زخمی ہونے کی بھی اطلاع ہے۔

زینب مارکیٹ کے گرد صورتحال کشیدہ ہوگئی،مدینہ مال کے پاس فوارہ چوک پر نامعلوم افراد نے ہوائی فائرنگ کی، اس موقع پر وہاں موجود پولیس تماشائی بنی رہی جس نے مسلح افراد کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی۔

نامعلوم افرادنے گاڑیوں پرپتھراؤ کرکے کئی گاڑیوں کے شیشے توڑ دیئے،کئی پولیس موبائلوں کو بھی نقصان پہنچایا،ایک پولیس موبائل اورموٹر سائیکل کو بھی آگ لگادی جبکہ وہاں واقع ٹریفک پولیس چوکی پر بھی توڑ پھوڑکی۔

فائرنگ اور توڑ پھوڑ کے بعد زینب مارکیٹ اور اطراف کےعلاقے میں افراتفری مچ گئی، آئی آئی چندریگر روڈ پر شدید ٹریفک جام ہوگیا، آرٹس کونسل سے ٹاور تک گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں۔

ادھر مظاہرین دوبارہ کراچی پریس کلب کے باہر جمع ہونا شروع ہوگئے ہیں۔

صدر زینب مارکیٹ میں مشتعل افراد کی توڑ پھوڑ کے بعد آئی آئی چندریگر روڈ اور اطراف کی سڑکوں پر ٹریفک کا دباؤ بڑھ گیا، وزیراعلی ہاؤس جانے والے راستے بند کردیئے گئے ہیں۔

وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے آئی جی سندھ کو ٹیلی فون کرکے ہدایت دی کہ شرپسندوں اور فائرنگ کرنے والوں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔