- الإعلانات -

کور کمانڈر اور ڈی جی رینجرز کی موجودگی میں اہم اجلاس

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)وزیراعلیٰ سندھ کی زیر صدارت ایپکس کمیٹی کا اجلاس ہوا۔ اجلاس میں گورنر سندھ ڈاکٹر عشرت العباد ، کور کمانڈر کراچی ، ڈی جی رینجرز ،چیف سیکرٹری ،سینئر وزیرنثار کھوڑو، مشیر اطلاعات مولا بخش چانڈیو اور مشیر قانون مرتضی وہاب نے بھی شرکت کی۔اجلاس میں مدارس کی رجسٹریشن ، ملزمان کی جے آئی ٹیز، انسداد دہشت گردی عدالتوں کے قیام پر فیصلوں پر غور کیا گیا۔ ڈی جی رینجرز سندھ نے اجلاس کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ 4 ستمبر2013 سے اب تک 848 ٹارگٹ کلرز کو گرفتار کیا گیا ، جو 7224 وارداتوں میں ملوث تھے ، ڈی جی رینجرز سندھ کہنا تھا کہ ایم کیو ایم عسکری ونگ کے 654 ،لیاری گینگ وار 95 اور کالعدم تنظیموں کے 99 ٹارگٹ کلرز کو گرفتار کیا گیا۔ مشیر قانون سندھ مرتضیٰ وہاب نے سندھ دینی مدرسہ رجسٹریشن بل پر اجلاس کو بریفنگ دی۔ مشیر قانون کا کہنا تھا کہ دینی مدارس کی رجسٹریشن ازسر نو کی جائے گی۔
کسی مدرسے کی رجسٹریشن منسوخ نہیں کی جائیگی، تمام مدارس کو ازسر نو رجسٹریشن کا موقع دیا جائیگا۔ مدارس کو ڈپٹی کمشنر، ضلع ایس پی، بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی اور وزارت مذہبی امور سے این او سی لینا لازمی ہو گا۔مشیر قانون کا کہنا تھا کہ کسی مدرسہ کوبراہ راست زکوۃ، فطرہ وصول کرنے کا اختیار نہیں ہو گا، دینی مدرسہ کے لئے محکمہ داخلہ سندھ رجسٹریشن فارم جاری کریگا۔ مرتضیٰ وہاب کا کہنا تھا کہ کراچی کے تمام اضلاع میں پیس کمیٹیاں تشکیل دی جائیں گی ، پیس کمیٹیوں کو مسائل حل کرنے کے اختیارات ہونگے، ایپکس کمیٹی نے سندھ دینی مدارس رجسٹریشن بل پر اتفاق کر لیا ۔