- الإعلانات -

اپنا فون کسی صورت نہیں دوں گی، شیریں مزاری کا خواتین پولیس اہلکاروں سے مکالمہ

سابق وفاقی وزیر برائے انسانی حقوق و تحریک انصاف کی رہنما شیریں مزاری کو گرفتار کرنے کی ویڈیو منظر عام پر آگئی۔ ویڈیو میں خواتین پولیس اہلکاروں کوشیریں مزاری کوگرفتارکرتےدیکھاجاسکتاہے۔ خواتین پولیس اہلکاروں نے شیریں مزاری کو گاڑی سے باہر آنے کا کہا۔ شیریں مزاری گرفتاری پر مزاحمت کرتی رہیں جس پر خواتین پولیس اہلکاروں نے شیریں مزاری کوزبردستی گاڑی سے نکالا۔

شیریں مزاری نے خواتین پولیس اہلکاروں سے مکالمہ میں کہا کہ اپنا فون آپ کو کسی صورت نہیں دوں گی۔ شیریں مزاری کو اسلام آباد کے ایف سکس کےعلاقے سے گرفتار کیا گیا۔ شیریں مزاری کو ڈی جی خان پولیس کی خواتین اہلکاروں نےگرفتار کیا اور انہوں نے گاڑی سے نکلنے سے انکار کیا،کھینچا تانی کی گئی۔

شیریں مزاری نے کہا کہ ’مجھے ٹچ نہ کریں،گرفتار کرنے والے کون ہو؟‘ خواتین پولیس اہلکاروں نے شیریں مزاری کوکہاکہ ہمارےپاس گرفتاری کے وارنٹ ہیں، اینٹی کرپشن ڈیرہ غازی خان کے اہلکار بھی گرفتاری کے وقت موجود تھے۔ اینٹی کرپشن پولیس کےساتھ ڈیرہ غازی خان کی خواتین اہلکاربھی موجودتھیں۔