- الإعلانات -

پاک افغان سرحد 2600 کلو میٹر تک غیر محفوظ ہے، وزارت خارجہ

اسلام آباد: مشیر خارجہ سرتاج عزیز کا کہنا ہے کہ 26 سو کلومیٹر پاک افغان سرحد غیر محفوظ ہے اور افغان سرحد سے نقل و حرکت بھی بے قاعدہ ہے۔

اسپیکرقومی اسمبلی ایاز صادق کی سربراہی میں قومی اسمبلی کا اجلاس ہوا جس میں وقفہ سوالات کے دوران وزارت خارجہ کی جانب سے تحریری بیان جمع کرایا گیا جس میں بتایا گیا کہ پاکستان کی افغانستان کے ساتھ 26 سوکلومیٹر سرحد غیر محفوظ ہے، ثقافتی قربت کے باعث سرحد پر روزانہ 40 سے 50 ہزار افراد کی نقل و حرکت جاری رہتی ہےاور زیادہ تر نقل و حرکت بے قاعدہ ہے۔

مشیر خارجہ سرتاج عزیز کے مطابق پاک افغان سرحد پر سیکیورٹی کو مؤثر بنانا زیادہ اہم ہے، اگر سیکیورٹی بہترین اور سخت ہوئی تو معاشی صورتحال خود ہی بہتر ہوجائے گی اسی لیے نقل و حرکت کو باقاعدہ اور محفوظ بنانے کے لیے پاکستان کی جانب سے گزر گاہوں پر گیٹ اور سرحد پر تاروں کی باڑ لگائی جارہی ہے جب کہ افغانستان کی مخالفت کے باوجود 37 میٹر اندر طورخم پر گیٹ لگایا گیا ہے، باقی گزر گاہوں پر بھی مرحلہ وار  تنصیبات کی جائیں گی۔۔

سعودی عرب میں مشکلات میں پھنسے پاکستانیوں کے حوالے سے مشیر خارجہ سرتاج عزیز کا کہنا تھا کہ ایک ہزار 448 پاکستانی سعودی عرب کی جیلوں میں قید ہیں، وزارت خارجہ کی جانب سے جیلوں میں قید پاکستانیوں سے ملاقات اور ممکنہ امداد فراہم کرنے کے لیے قونصلررسائی کا بندوبست کیا جاتا ہے۔ سرتاج عزیز نے بتایا کہ سزا مکمل کرلینے والے افراد کو ہنگامی طور پر سفری دستاویزات دی جاتی ہیں جن افراد کی سزا مکمل ہوچکی ہے ان کی جلد رہائی کے لیے بھی کوششیں جاری ہیں جب کہ 5 ہزار 500 پاکستانیوں کو سعودی عرب میں رہائشی اجازت نامے اور اقامے میں مشکلات کا سامنا ہے۔