- الإعلانات -

روز نیوز کے چیئرمین ایس کے نیازکی کو آر سی سی آئی انٹر نیشنل اچیومنٹ ایوارڈ سے نوازا گیا-

دبئی میں ایس کے نیازی کو آر سی سی آئی انٹر نیشنل اچیومنٹ ایوارڈ 2016 سے نوازا گیا
ایوارڈ دبئی میں شیخ نیہان المبارک نے دیا ، پاکستان میں یہ ایوارڈ حاصل کرنے والی چھ شخصیات میں ایس کے نیاز ی بھی شامل، اس کے علاوہ ایس کے نیازی نے متعدد ایوراڈ بھی حاصل کیے
دبئی(بیورورپورٹ) پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز کے چیف ایڈیٹر اور روز نیوز کے چیئرمین ایس کے نیازکی کو راولپنڈی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کی جانب سے آر سی سی آئی انٹر نیشنل اچیومنٹ ایوارڈ سے نوازا گیا، یہ ایوارڈ دبئی میں شیخ نیہان المبارک نے دیا پاکستان میں یہ ایوارڈ حاصل کرنے والی چھ شخصیات ہیں جن میں ایس کے نیازی بھی شامل ہے ،گزشتہ سال بھی ایس کے نیازی نے یہ ایوارڈ حاصل کیا ،ایس کے نیازی کی زیر ادارت پاکستان گروپ پاکستان گروپ آف نیوز پیپرز کے زیر اہتمام روزنامہ پاکستان ،ڈیلی دی پیٹریاٹ ،روزنامہ میرا پاک وطن م ڈیلی ایکشن، روزنامہ نوائے نواب شاہ، ماہ نامہ نیا رخ بھی شائع ہوتے ہیں، روز نیوز پر پانچ وقت اذان نشر کرنے پر امام کعبہ نے ایس کے نیازی کو خصوصی ایوارڈ سے نوازا، اعلیٰ صحافتی خدمات کا اعتراف کرتے ہوئے حکومت پاکستان نے ایس کے نیازی کو تمغہ امتیاز بھی دیا، جبکہ بیسٹ رپورٹنگ پر ایٹمی سائنس دان ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے گولڈ میڈل دیا، ایس کے نیازی کی خبروں اور کالموں پر سپریم کورٹ آف پاکستان نے متعدد از خود نوٹس لیے جس کے تحت قومی خزانے کو اربوں روپے کے نقصان سے بھی بچایا گیا، ایس کے نیازی کے کالموں کے مجموعے پر مشتمل کتاب حلقہ احباب کے بھی کئی ایڈیشن شائع ہو چکے ہیں، روز نیو پر آن ایئر جانے والا معروف پروگرام سچی بات بھی انتہائی شہرت کا حامل ہے اس میں بھی وہ ملکی اور بین الا قوامی حالات کے حوالے سے انتہائی موثر تجزئے پیش کرتے ہیں جن کو عوامی اور حکومتی سطح پر انتہائی پزیرائی حاصل ہے، کرپشن کے خلاف موثر آواز اٹھانے پر قومی احتساب بیورو نے بھی ایوارڈ دیا ، ایس کے نیازی کے زیر سرپرستی چلنے والے ایس کے این ٹرسٹ کے تحت غرباء، یتیموں اور مسکینوں کی مدد بھی کی جاتی ہے، یتیم بچوں کی تعلیم اور کفالت کا بھی اہتمام ہے ،ڈائلسسز سنٹر کے لیے ایس کے نیازی نے لاکھوں روپے کی معاونت کی، جس کے تحت وہاں پر انتہائی قیمتی مشینری منگوائی گئی، جو مریضوں کے علاج معالجے میں ممومعاون ثابت ہو رہی ہیں ، ملک بھر میں خدانخواستہ کوئی بھی آفت آجائے تو ایس کے این ٹرسٹ کے ذریعے امدادی سرگرمیاں بروئے کار لائی جاتی ہیں ، مظفر آباد کا زلزلہ ہو یا تھر میں قحط یا مارگلہ ٹاور کا زلزلے سے انہدام ایس کے این ٹرسٹ ہر جگہ پیش پیش نظر آتا ہے ،2011 کے گیلپ سروے کے مطابق ایس کے گروپ آف کمپنیز کا پاکستان کے بڑے گروپوں میں شمار ہوتا ہے