- الإعلانات -

راولپنڈی:ڈاکٹروں نے مبینہ غلط تشخیص کرکے 22 سالہ لڑکی کو مردہ قرار دے دیا

راولپنڈی کے بے نظیر بھٹو اسپتال میں زندہ لڑکی کو مردہ قرار دے دیا گیا، سیکریٹری صحت پنجاب نے واقعے کی رپورٹ دو دن میں طلب کرلی ۔

راولپنڈی کے بے نظیر بھٹو اسپتال میں ڈاکٹروں نے مبینہ غلط تشخیص کرکے 22 سالہ لڑکی کو مردہ قرار دے دیا تاہم لڑکی کی ماں نے نبض چیک کرنے کے بعد لڑکی کے زندہ ہونے کا شور مچایا،اس موقع پر ڈیوٹی ڈاکٹر کی لواحقین سے ہا تھا پائی بھی ہوئی۔

لواحقین نے دورے پر آئے ہوئے سیکریٹری ہیلتھ نجم شاہ کو ایمرجنسی کے باہر گھیر لیا اور شکایت کردی کہ 5دن سے ان کی بیٹی اسپتال میں ہائی بلڈ پریشر کی وجہ سے لائی گئی ہے تاہم ایک گولی تک بھی اسپتال سے نہیں دی گئی۔

لڑکی کی والدہ کی شکایت پر سیکریٹری صحت پنجاب نے پرنسپل الائیڈ اسپتال ڈاکٹر عمر کی سرزنش کی اور 48 گھنٹے میں انکوائری کرکے رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی۔