- الإعلانات -

منی لانڈرنگ کیس میں ایم کیو ایم کے بانی الطاف حیسن کے خلاف تحقیقات ختم

برطانوی پولیس سکاٹ لینڈ یارڈ نے اس بات کی تصدتق کی ہے کہ منی لانڈرنگ کیس میں ایم کیو ایم کے بانی الطاف حیسن سمیت چھ افراد کے خلاف تحقیقات ختم کر دی ہیں۔

سکاٹ لینڈ یارڈ کے ترجمان نے بی بی سی اردو کو بتایا کہ تمام ثبوتوں کی تحقیقات کے بعد سکاٹ لینڈ یارڈ اس نتیجے پر پہنچی ہے کہ اس بات کے ناکافی ثبوت ہیں کہ دو ہزار بارہ اور چودہ کے درمیان ملنے والی پانچ لاکھ پاؤنڈ کی رقم جرائم کے ذریعے حاصل کی گئی تھی اور یا اس رقم کو غیر قانونی کاموں کے لیے استعمال کیا جانا تھا۔

سکاٹ لینڈ یارڈ کے ترجمان کا کہنا تھا کہ منی لانڈرنگ کیس کی تحقیقات میں چھ افراد کو گرفتار کیا گیا جبکہ اٹھائیس افراد کو انٹرویو کیا گیا تھا۔ اور اس دوران تحقیقات کے لیے ساؤتھ اور نارتھ لندن کی نو پراپرٹیز کی تلاشی لی گئی تھی۔

سکاٹ لینڈ یارڈ کے مطابق انھوں نے کیس کی فائل برطانیہ کی کراؤن پراسیکیوشن سروس کے سپرد کی تھی تاکہ ثبوتوں کی روشنی میں اس بات کا جائزہ لیا جا سکے کہ کیا اس کیس دائر کیے جا سکتے ہیں۔

کراؤن پراسیکیوشن سروس نے برطانوی پولیس کو اس کیس پر یہ مشورہ دیا ہے کہ فراہم کردہ ثبوتوں کی روشنی میں یہ مقدمہ آگے نہیں چلایا جا سکتا۔ اس لیے اب یہ مقدمہ بند کیا جا رہا ہے اور آئندہ اس مقدمے میں کوئی کاروائی نہیں ہو گی۔