- الإعلانات -

پاکستان پیپلز پارٹی: لانگ مارچ کریں گی.حکومت کے سامنےمطالبات

پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے حکومت کے سامنے چارحکومت کے سامنے رکھتے ہوئے کہا ہے کہ اگر یہ مطالبات پورے نہ کیے گئے تو وہ لانگ مارچ کریں گے۔

بلاول بھٹو اتوار کو زرداری سنہ2007 میں کراچی میں کارساز کے مقام پر بم دھماکے میں ہلاک ہونے والے 150 سے زائد افراد کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے منعقد کی گئی ’سلام شہدا‘ ریلی سے خطاب کر رہے تھے۔

پیپلز پارٹی کی جانب سے نکالی گئی یہ ریلی بلاول چورنگی سے شروع ہوئی جو کارساز چوک پر پہنچ کر ختم ہوئی۔

ریلی کے اختتام پر خطاب کرتے ہوئے بلاول نے حکومت سے چار مطالبات کیے اور کہا کہ مطالبات تسلیم نہ کیے گئے تو وہ لانگ مارچ بھی کرسکتے ہیں۔

  1. سابق صدر آصف زرداری کے دور میں اقتصادی راہداری پر ہونے والی اے پی سی کی قرار دادوں پر عمل ہونا چاہیے۔
  2. پاناما لیکس پر پیپلزپارٹی کے بل کو منظور کیا جائے۔
  3. فوری طور پر ملک میں مستقل وزیرخارجہ کو تعینات کیا جائے۔
  4. پارلیمنٹ کی نیشنل سکیورٹی کمیٹی کو ازسر نو تشکیل دیا جائے۔

انھوں نے کہا کہ اگر عوام ان کا ساتھ دیں تو وہ انھیں دہشت گردوں سے آزادی دلائیں گے۔

پیپلزپارٹی کے چئیرمین بلاول بھٹو زرداری نے وزیراعظم پر الزامات کی بارش کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف نیشنل ایکشن پلان پرعمل درآمد کرانے میں ناکام ہوگئے ہیں، جس کی وجہ سے ملک کمزور ہورہا ہے۔

انھوں نے کہا کہ حکومت کی غلط پالیسیوں کی وجہ سے سی پیک متنازع بنتا جا رہا ہے۔