- الإعلانات -

بھارت پاکستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کر رہا ہے : دفتر خارجہ

اسلام آباد: دفتر خارجہ کے ترجمان نفیس ذکریا نے کہا کہ بھارت دنیا کی توجہ کشمیر سے ہٹانے کے لیے کئی ہتھکنڈے استعمال کر رہا ہے ، آئی سی او نے بھی بھارتی مظالم کیخلاف سخت کارروائی کی قرارداد منظور کرلی۔

تفصیلات کے مطابق دفتر خارجہ کی جانب سے ہفتہ وار بریفنگ میں بتایا گیا کہ بھارت دنیا کی توجہ مقبوضہ کشمیر سے ہٹانے کے لیے کئی ہتھکنڈے استعمال کر رہا ہے ۔ اسلامک ممالک کی تنظیم نے بھارتی مظالم کیخلاف سخت کارروائی کی قرارداد منظور کر لی۔

اسلامی کانفرنس تنظیم کے وزرائے خارجہ کی کونسل نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کیخکاف سخت قرارداد منظور کی ہے ، کانفرنس چار صفحات پر مشتمل ہے۔اسلامی ممالک کے سپیکرز نے انقرہ میں کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی مذمت کی ہے۔

انھوں نے کہا کہ بھارتی جارحیت اور کشمیریوں کی نسل کشی جاری ہے ۔ زیر حراست ہلاکتوں میں اضافہ ہوچکا ہے ، پیلیٹ گن کے استعمال میں کمی نہیں آئی۔

بھارت نوے سے زیادہ بار جنگ بندی معاہدے کی خلاف ورزی کر چکا ہے ، کیرالہ سیکٹر میں بھارتی فائرنگ سے ایک شہادت ہوئی ہے ، بھارتی جارحیت سے پانچ افراد زخمی ہوئے۔

ترجمان نے کہا کہ بھارت میں پاکستانی اداکاروں کے ساتھ ہونے والے سلوک پر افسوس ہے۔بھارت کی جانب سے بین الاقوامی فورمز کو سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کرنا قابل مذمت ہے ، اب تاک سارک سربراہ کانفرنس آٹھ مرتبہ ملتوی ہوئی ، پانچ مرتبہ بھارت نے ملتوی کرائی۔

انھوں نے کہا کہ پاکستان خطے میں معاشی روابط کو فروغ دینے کے لیے کام کر رہا ہے ، سی پیک اور گیس پائپ لائن منصوبے اس کی عکاسی ہیں۔بھارت کی پاکستان کو تنہا کرنے کا دعویٰ مضحکہ خیز ہے۔

پاکستان افغان مفاہمتی عمل کو ہمیشہ افغان کی جانب سے افغان کی قیادت میں پایہ تکمیل تک پہنچنے کا خواہاں ہیں ، ہم سمجھتے ہیں کہ مناسب چار ملکی مذاکرات مناسب فورم ہے ، پاکستان اس فورم کے تحت کردار ادا کرنے کیلئے تیار ہے۔

انھوں نے کہا کہ بھارت پاکستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کر رہا ہے۔ بھارتی ایجنسیاں پاکستان میں امن مخالف سرگرمیوں میں ملوث ہیں ۔ بھارتی وزیر اعظم کے بلوچستان اور بنگلہ دیش کے حوالے سے بیانات ریکارڈ پر ہیں۔