- الإعلانات -

وزیر اعظم کا آرمی چیف کے ہمراہ ‘رادالبرق 2016’ نامی فوجی مشقوں کا معائنہ

بہاولپور: وزیر اعظم نواز شریف نے آرمی چیف جنرل راحیل شریف کے ہمراہ خیر پور ٹامیوالی میں مسلح افواج کی رادالبرق 2016 کے نام سے جاری ہائی پروفائل فوجی مشقوں کا معائنہ کیا۔

تفصیلات کے مطابق بہاولپور چولستان میں جاری پاکستان آرمی کی ہائی پروفائل مشقیں رادالبرق 2016 کے معائنہ کے لیےوزیر اعظم میاں محمد نواز شریف خصوصی طیارے کے ذریعے ملتان پہنچے۔ ان مشقوں میں مشقوں میں پاک فوج اور فضائیہ حصہ لے رہی ہیں۔

اس موقع پر راد لبرق میں فائر پاور کا مظاہرہ کیا گیا، ائیرفورس کی شان جے ایف 17 تھنڈر طیارے نے جہاں ہدف کو نشانہ بنایا وہیں معراج طیاروں نے بھی بمباری کا شاندار مظاہرا کیا،ایف 16 اور کوبرا ہیلی کاپٹر بھی مشقوں کا حصہ بنے۔ مشقوں کے دوران ٹینک اور توپوں کے ذریعے دشمن کو نشانہ بنانے کا مظاہرہ بھی کیا گیا، پاکستانی ڈرون براق بھی مشقوں کا حصہ بنایا گیا، پاک فضائیہ نے بھی ایکشن میں حصہ لیا۔

مشقوں کا مشاہدہ کرنے کے بعد وزیراعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ مشقوں کا مشاہدہ کرکے بے حدخوشی ہوئی ہے، آپریشن ضرب عضب کی کامیابیوں کو پوری دنیا مانتی ہے۔ پاکستان کا دفاع ناقابل تسخیرہے، مسلح افواج اندرونی اوربیرونی چیلنجز سے نمٹنے کے لیے پوری طرح تیار ہیں، کسی بھی جارحیت کا منہ توڑجواب دیا جائے گا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ایل اوسی پرفائربندی کے معاہدے کی خلاف ورزی تشویش ناک ہے، مسئلہ کشمیر کا حل خطہ میں امن کے قیام کے لیے ناگزیر ہے۔

وزیراعظم نے کہاکہ سی پیک مکمل طورپرفعال ہونےجارہا ہے، دشمن نے بھی اپنے عزائم واضح کردئیے ہیں۔

جنگی مشقوں کے دوران وزیراعظم اور آرمی چیف خوشگوار موڈ میں دکھائی دئیے، تقریب کے دوران دونوں رہنماؤں اکٹھے بیٹھے اور ان کے درمیان مسلسل مسکراہٹوں کا تبادلہ بھی ہوتا رہا۔

وزیر اعظم کے ہمراہ کئی ممالک کے سفیران نے بھی فوجی مشقوں کا معائنہ کیا، ان کے علاوہ  فوجی اورسول قیادت بھی موجود تھی

پاک فوج کی یہ مشقیں دشمن کے لئے پیغام ہیں کہ پاکستانی فوج کے جوان سرحدوں کی حفاظت سے غافل نہیں، اورارض پاک کے تحفظ کے لئے تیار ہیں، یہ فوجی مشقیں کسی بھی جارحیت کا مقابلہ کرنے کیلئے کی جارہی ہیں۔