- الإعلانات -

ڈونلڈ ٹرمپ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے کردار ادا کریں، ترجمان دفتر خارجہ

اسلام آباد: ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا ہے کہ نو منتخب امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ مسئلہ کشمیر کے حل کے لیے اپنا کردار ادا کریں تو خوش آمدید کہیں گے، بھارت کےمنفی تاثر کے باوجود پاکستان افغانستان میں قیام امن کےلیے ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں شرکت کرے گا۔

ترجمان دفتر خارجہ نفیس ذکریا نے ہفتہ وار بریفنگ کے دوران بتایا کہ وزیر اعظم کا امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو ٹیلی فون ایک معمول کی کال تھی،حکومت پاکستان امریکہ کے ساتھ اپنے تعلقات کو اہمیت دیتی ہے اور ان میں اضافہ کی خواہشمند ہے، امریکی صدر نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال پر اپنا کردار ادا کرنے کی بات کی ہے جس کو خوش آمدید کہتے ہیں۔

ترجمان دفترخارجہ کا کہنا تھا کہ بھارت کی جانب سے مقبوضہ کشمیر میں ظلم و بربریت جاری ہے، وقت آ گیا ہے کہ عالمی ادارے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال کا نوٹس لیں، بھارت کے منفی رویے کے باوجود پاکستان ہارٹ آف ایشیا کانفرنس میں شرکت کے لیے جا رہا ہے۔

نفیس ثکریا کا کہنا تھا کہ فلسطینیوں کی بحالی اور سیٹلمنٹ کے معاملہ پر عربوں کے ساتھ ہیں، یہی وجہ ہے کہ پاکستان نے ابھی تک اسرائیل سےتعلقات قائم نہیں کیے، پاکستان اور روس کے تعلقات میں تیزی سے بہتری آ رہی ہے، ان کا کہنا تھا کہ سی پیک پاکستان اور چین کا مشترکہ منصوبہ ہے، دیگر ممالک کی شمولیت کے حوالے سے دونوں ممالک ہی فیصلہ کریں گے۔