- الإعلانات -

سپریم کورٹ کا شفاف پانی کی فراہمی پر کمیشن بنانے کا حکم

سپریم کورٹ نے سندھ میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی سے متعلق دائر درخواست پر چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ کو شفاف پانی کی تقسیم کاری سے متعلق کمیشن بنانے کا حکم دے دیا،کمیشن کے سربراہ سندھ ہائی کورٹ کے جج ہوںگے۔

سندھ میں پینے کے صاف پانی کی فراہمی سے متعلق درخواست کی سماعت کے دوران چیف سیکریٹری سندھ رضوان میمن اور دیگر افسران سپریم کورٹ کراچی رجسٹری میں پیش ہوئے۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا تھا کہ صوبے بھر کو گندا اور کھارا پانی فراہم کیا جارہا ہے، جس کے باعث لوگوں کی اموات ہورہی ہیں۔

جسٹس امیر ہانی مسلم نے ریمارکس دیے کہ صوبہ سندھ بھی پاکستان کا حصہ ہے،صاف پانی کی فراہمی حکومت کا کام ہے،کراچی میں بھی پینے کے پانی کے مسائل ہیں۔

جسٹس امیر ہانی مسلم کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نےصاف پانی کی فراہمی اور تقسیم کاری سے متعلق کمیشن بنانے کا حکم دے دیا۔

عدالت نے حکم دیا کہ چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ ایک ہفتے میں کمیشن کیلئے جج کا تقرر کریں،کمیشن درخواست گزار کے الزامات کی تحقیقات کرکے 6 ہفتوں میں رپورٹ پیش کرے۔