- الإعلانات -

گورنر پنجاب نے نجی تعلیمی اداروں کی فیسوں کے حوالے سے آرڈیننس جاری کردیا.

لاہور : گورنر پنجاب ملک محمد رفیق رجوانہ نے نجی تعلیمی اداروں کی فیسوں کے حوالے سے آرڈیننس جاری کردیا،اب فیسیں بڑھانے،وصول شدہ فیس ایڈجسٹ ناکرنے اور خلاف ورزی کے مرتکب اداروں کو بھاری جرمانے ہونگے جو20ہزارروپے روزانہ سے40لاکھ روپے تک ہو سکتے ہیں۔پرائیویٹ ایجوکیشنل انسٹی ٹیوشنز پروموشن اینڈریگولیشن ترمیمی آرڈیننس2015ء پنجاب جاری ہوگیا،نجی تعلیمی اداروں کوپابند بنایاگیاہے کہ آرڈیننس جاری ہونے کے7دن کے اندر اضافی وصول شدہ فیسیں نئی واجب الادا فیسوں کے ساتھ ایڈجسٹ کریں۔ماہانہ فیس کے ساتھ داخلہ فیس یا سکیورٹی فیس بھی نہیں بڑھے گی،والدین کو کسی مخصوص دکان سے کتابیں یایونیفارم خریدنے پرمجبور بھی نہیں کیاجائے گا،خلاف ورزی پررجسٹرنگ اتھارٹی نوٹس جاری ہونیکی تاریخ سے متعلقہ تعلیمی ادارے کو20ہزار روپے روزانہ کے حساب سے جرمانہ کرسکتی ہے۔30دن سے زیادہ قانون کی خلاف ورزی پر مجسٹریٹ ادارے کو2لاکھ سے 20لاکھ روپے تک جرمانہ کر سکتا ہے۔رجسٹریشن کے بغیراسکول چلانے پر مالک کو3لاکھ سے40لاکھ روپے تک جرمانہ ہوسکتا ہے۔ رجسٹرنگ اتھارٹی اداریکو سنے بغیر سزا نہیں دیگی۔ فرسٹ کلاس مجسٹریٹ آرڈیننس کی خلاف ورزی کے کیس کی سماعت کرے گا۔