- الإعلانات -

فوجی عدالتوں کے معاملے پر حکومت نے ہمارے بنیادی مطالبات مانے ہیں، اعتزاز احسن

اسلام آباد: پیپلزپارٹی کے رہنما اور سینیٹ میں اپوزیشن لیڈر اعتزاز احسن کا کہنا ہے کہ فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کے معاملے پر ہمارے جو تحفظات تھے وہ دور ہوگئے ہیں اور حکومت نے ہمارے بنیادی مطالبات مان لیے ہیں۔

اسلام آباد میں پارلیمانی جماعتوں کے اجلاس کے بعد میڈیا سے بات کرتے ہوئے اعتزاز احسن نے کہا کہ فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع پراتفاق رائے ہوا ہے، اس معاملے پر ہمارے جو تحفظات تھے وہ دور ہوگئے ہیں اور بنیادی مطالبات مان لیے گئے ہیں جب کہ ہم کچھ شقیں رائج کرائیں گے لیکن بنیادی طور پراتفاق رائے ہے، ترمیمی بل کی حتمی عبارت وزیر قانون ہمیں بھجوائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ حکومت نے ہمیں دیا جس کے باعث ہم فوجی عدالتوں کی مدت میں 2 سال کی توسیع پر راضی ہوگئے ہیں جب کہ بلاول بھٹو نے نیشنل سیکیورٹی کمیٹی کی تجویز دی تھی، توقع ہے پارلیمان کی قومی سلامتی کمیٹی بلاول کے مطالبے کے مطابق ہوگی۔

دوسری جانب پی ٹی آئی کے وائس چیرمین شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ اس بات پراتفاق ہوا کسی خاص مذہبی طبقے کو نشانہ نہیں بنایا جائے گا جب کہ آج پھرثابت ہوا ہے جمہورت کے نتائج ہمیشہ اچھےنکلتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دوتہائی اکثریت سے بل پاس ہوسکتا تھا لیکن اتفاق رائے سے بل پاس ہوتواس کی خوبصورتی زیادہ ہوتی ہے جب کہ مسودہ پیر کو قومی اسمبلی میں پیش کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ملٹری کورٹس میں سیشن ججزکے لیے ہم نے اصرار نہیں کیا۔